مردم شماری کے عملے کو دیکھ کر بلڈنگ سے چھلانگ لگانے والا شخص دم توڑ گیا

کراچی: شہر قائد میں مردم شماری کے عملے کو دیکھ کر ایک شخص نے عمارت کی پہلی منزل سے چھلانگ لگادی، جو بعدازاں ہسپتال میں دوران علاج دم توڑ گیا۔

پولیس کے مطابق کراچی کے علاقے نیو کراچی سیکٹر 5 میں بلال کالونی تھانے کی حدود میں جب مردم شماری کی ٹیم پہنچی تو 35 سالہ کلیم حسین نامی شخص نے عملے کو دیکھ کر پہلی منزل سے چھلانگ لگادی۔

پولیس کے مطابق مذکورہ شخص کو شدید زخمی حالت میں گرفتار کرکے عباسی شہید ہسپتال منتقل کیا گیا، جہاں وہ زخموں کی نہ تاب لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق متوفی ایک ٹرانسپورٹر تھا، جس نے کئی لوگوں سے قرض لے رکھا تھا، قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ مردم شماری کے عملے کے ساتھ فوجی اہلکاروں کو دیکھ کر وہ ڈر گیا اور اسی عالم میں اس نے نیچے چھلانگ لگادی۔

خیال رہے کہ ملک بھر میں چھٹی مردم شماری کا عمل 15 مارچ سے جاری ہے۔

19 سال بعد ملک میں مردم وخانہ شماری کے عمل کو یقینی بنانے کے لیے شمار کنندہ عملے میں مختلف محکموں کے 1 لاکھ 18 ہزار افراد کو شامل کیا گیا ہے، ان تمام افراد کو مردم شماری کے لیے خصوصی تربیت بھی فراہم کی گئی ہے۔

جبکہ متعلقہ اضلاع میں 1 لاکھ 75 ہزار فوجی اہلکاروں کو بھی تعینات کیا گیا ہے، جو شمار کرنے کے ساتھ ساتھ سروے کرنے والے عملے کو سیکیورٹی بھی فراہم کررہے ہیں۔

کراچی : (دنیا نیوز) کوئی جرم کیا تھا؟ یا کچھ اور ، مقتول نارتھ کراچی متین ہیون میں ایک ہفتے پہلے شفٹ ہونے والا کلیم قریشی اس وقت کودا جب مردم شماری والے دروازے پر پہنچے تھے۔اطلاع ملی تو پولیس اور رینجرز جوان بھی موقع پر پہنچ گئے اور زخمی شخص کو عباسی شہید اسپتال پہنچایا جہاں وہ دم توڑ گیا ، پولیس کے مطابق کلیم مقروض تھا، فیملی میں بھی جھگڑے رہتے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: