عزیر بلوچ کے خلاف ایک اور کیس کی سماعت

عزیر بلوچ کے خلاف ایک اور کیس کی سماعت

کراچی: لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کے خلاف دائر غیر قانونی اسلحہ کیس کی سماعت ہوئی، جسے یکم فروری کے لیے ملتوی کردیا گیا۔

نمائندہ ذرائع کے مطابق لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ کے خلاف غیر قانونی اسلحہ کیس کی سماعت ہوئی، جیل حکام نے عزیر بلوچ کو عدالت میں پیش نہیں کیا اور عدالت کو آگاہ کیا کہ جنوبی افریقا کی ٹیم کی آمد اور سیکیورٹی کے باعث عزیر بلوچ کو پیش نہیں کیا گیا کیونکہ شہر میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

عدالت نے دلائل سننے بغیر کی سماعت کو ملتوی کیا مزید سماعت یکم فروری تک ملتوی کردیا۔ پولیس حکام کے مطابق عزیر بلوچ کے خلاف غیر قانونی اسلحہ کیس 2005 سے درج ہواتھا، لیاری گینگ وار کے خلاف مزید کیسوں کا فیصلہ چند روز میں ہونے کا امکان ہے۔

عزیر بلوچ کے خلاف قتل کے دو مقدمات ماڈل کورٹ جنوبی کو منتقل کردئے گئے ہیں، دونوں قتل کے مقدمات چاکیواڑہ اور کلاکوٹ میں درج ہوئے تھے۔ عزیر بلوچ کے وکلا کا کہنا تھا کہ ماڈل کورٹ نے تین سماعتوں میں عزیر بلوچ کیسز کا سنانا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران عزیر بلوچ کو پانچ مقدمات میں استغاثہ کی جانب سے شواہد فراہم نہ کرنے کی وجہ سے بری کیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: