کراچی کو آدھا گننے پر رضامندی، ایم کیو ایم نے مردم شماری پر حکومت سے سمجھوتہ کرلیا

کراچی کو آدھا گننے پر رضامندی، ایم کیو ایم نے مردم شماری پر حکومت سے سمجھوتہ کرلیا

ایم کیوایم نےکراچی مردم شماری پرپی ٹی آئی حکومت سےسمجھوتہ کرلیا، .مردم شماری نتائج پر ایم کیوایم کی حمایت کےبعدکل مشترکہ مفادات کونسل سےمنظوراس کی منظوری ہوجائیگی، تین کروڑ میں سے ڈیڑھ کروڑ کو مائنس کروا کے ایم کیو ایم نے سیاسی اہداف پورے کرلیے۔

ایم کیوایم نےکراچی کی مردم شماری کےنتائج پرتحفظات کااظہارکیاتھا، اور ہر فورم پر اس کو چیلنج بھی کرنے کا اعلان کیا تھا، جس کے بعد ایم کیوایم کےوزیر پرمشتمل وفاقی کابینہ نےمردم شماری کی منظوری دی، وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کی سربراہی میں کابینہ کی خصوصی کمیٹی پہلے ہی منظوری دےچکی جبکہ کمیٹی کے اہم رکن امین الحق بھی مردم شماری نتائج کی منظوری دے چکے ہیں۔

کمیٹی میں منظوری دینےکےبعد امین الحق نےکابینہ اجلاس میں اختلافی نوٹ بھی لکھا، پیپلزپارٹی کامشترکہ مفادات کونسل میں مردم شماری کی منظوری کی مخالفت کا فیصلہ کیا ہے۔

ایم کیو ایم نے مردم شماری نتائج کے حوالے سے رابطہ کمیٹی کا اجلاس بھی کیا۔ جس میں مردم شماری نتائج کو تسلیم کرنے کا فیصلہ کیا۔

ایم کیو ایم کے رہنما سینٹر فیصل سبزواری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ
مردم شماری کے خلاف ایم کیو ایم سپریم کورٹ گئی ہے،کراچی کی مردم شماری میں بڑے پیمانے پر ردوبدل کی گئی ہے،ہم تحریک انصاف کے ساتھ حکومت میں گئے، جو مفاہمت کی اس میں مردم شماری کا معاملہ سر فہرست تھا۔

ان کا کہنا تھا ہم نے حکومت نے سفارشات بھی بھیجی دوبارہ مردم شماری کروائے جائیں، آج جو مردم شماری کے نتائج کا اعلان ہوا وہ ٹھیک نہیں ہوا مگر ایک اچھی بات ہے کہ حکومت نے نئی مردم شماری جلد از جلد کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔


نوٹ: آپ اپنی خبریں، پریس ریلیز ہمیں ای میل
zaraye.news@gmail.com پر ارسال کرسکتے ہیں، علاوہ
ازیں آپ ہمیں اپنی تحاریر / آرٹیکل اور بلاگز / تحاریر / کہانیاں اور
مختصر کہانیاں بھی ای میل کرسکتے ہیں۔ آپ کی بھیجی گئی ای میل کو
جگہ دی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: