گجر نالہ آپریشن، عوامی ورکر پارٹی اور کراچی بچاؤ تحریک کے کارکنان گرفتار، خواتین بھی شامل

گجر نالہ مکانات انہدام، عوامی ورکر پارٹی اور کراچی بچاؤ تحریک کے کارکنان گرفتار، خواتین بھی شامل

کراچی: رمضان المبارک کے دوران گجر نالہ آپریشن کو رکوانے کے لیے متاثرین کے ساتھ مل کر انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنانے والے سیاسی جماعت کے کارکنان کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔

عوامی ورکرز پارٹی اور کراچی بچاؤ تحریک کے کارکنان اور متاثرین گجر نالا نے 15اپریل بروز جمعرات صبح7بجے بمقام ضیاالدین ہسپتال پرhuman chain بنانے کا اعلان کیا، اس احتجاج کا مقصد رمضان المبارک کے مہینے میں آپریشن کو ملتوی کروانا ہے تاکہ متاثرین کو ماہ صیام میں ریلیف مل سکے، یہ آپریشن علاقہ مکینوں کے لئے عذاب کی کیفیت اختیار کر چکا ہے‘۔ اے ڈبلیو پی کے جنرل سیکریٹری خرم علی نے سول سوسائٹی کے نمائندگان سے احتجاج میں شرکت کی خصوصی درخواست بھی کی تھی۔

آج صبح جب پروگرام کے مطابق اے ڈبلیو پی کے بی سی کے اراکین ضیا الدین اسپتال کے پاس پہنچے تو پولیس نے انہیں کوثر نیازی کالونی سے گرفتار کر کے حیدری تھانے منتقل کردیا۔ حراست میں لے جانے والے افراد میں خرم علی، ارم، زارا، اسرار اور دیگر شامل ہیں۔

گجرنالہ، مکانات کی مسماری پر احتجاج کرنے والے متعدد نوجوان گرفتار، AWP کی شدید مذمت

سول سوسائٹی کے نمائندگان اور متاثرین گجر نالہ نے عوامی ورکرز پارٹی کے کارکنان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: