ایمازون اسٹور پر پاکستان سے لین دین ممکن، فہرست میں نام شامل، باضابطہ منظوری

ایمازون اسٹور پر پاکستان سے لین دین ممکن، فہرست میں نام شامل، باضابطہ منظوری

آئن لائن اسٹور ایمازون نے پاکستان کو اُن ممالک کی فہرست میں شامل کرلیا جو اُن کے پلیٹ فارم سے خریدوفروخت کرسکتے ہیں۔

وزیراعظم کے معاونِ خصوصی برائے معاشیات و اقتصادیات عبدالرزاق داؤد نے یہ خوش خبری پاکستانی نوجوانوں کو سنائی اور بتایا کہ ’ایما زون اسٹور پر پاکستانی بھی چیزیں فروخت کرسکتے ہیں کیونکہ کمپنی نے پاکستان کا نام بھی فروخت کنندگان ملک میں شامل کرلیا‘۔

انہوں نے بتایا کہ کمپنی پاکستان کو آئندہ چند روز میں شامل کرنے کا باقاعدہ اعلان کرے گی۔

واضح رہے کہ ایمازون آن لائن اسٹور کا شمار دنیا کے اُن بڑے پلیٹ فارمز میں ہوتا ہے جہاں ہر قسم کی اشیا کی آن لائن خریدوفروخت کی جاتی ہے، پابندی کے باوجود بھی کچھ پاکستانی ایمازون اسٹور پر دکانیں کھول کر  غیرقانونی طریقے سے کام کررہے تھے۔

ایمازون اسٹور میں فروخت کنندہ کو خود کو رجسٹرڈ کرنا ہوتا ہے ، جس کے بعد وہ دکان کا مالک بن جاتا ہے اور ملنے والے آرڈرز کو مطلوبہ پتے پر بھیجتا ہے، کسی بھی چیز کی رقم بذریعہ ایمازون اسٹور اُس کو موصول ہوتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: