نائن زیرو چھاپہ کیس:‌ عبید کے ٹو سمیت دیگر ملزمان نے اے ٹی سی فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرلیا

نائن زیرو چھاپہ کیس:‌ عبید کے ٹو سمیت دیگر ملزمان نے اے ٹی سی فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرلیا

کراچی: ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو سے گرفتار ہونے والے مبینہ ٹارگٹ کلر عبید کے ٹو سمیت دیگر ملزمان نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کے فیصلے کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی۔

عبید کے ٹو، فرحان ملا، ندیم احمد، عامر توتلا، عبد القادر سمیت دیگر ملزمان کو قانون نافذ کرنے والے ادارے نے نائن زیرو آپریشن کے دوران 6سال قبل گرفتار کیا تھا، جس کے بعد اُن کے خلاف دھماکا خیز مواد، جرائم کی دیگر وارداتوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے نائن زیرو کیس میں نامزد ملزمان میں سے بیشتر کو بری کیا جبکہ عبید کے ٹو، فرحان ملا، نادر شاہ، عبد القادر، عامر توتلا، ندیم ملا سمیت دیگر کو قید و جرمانے کی سزا سنائی تھی۔

اب ملزمان نے سندھ ہائی کورٹ میں اے ٹی سی سزا کے خلاف پٹیشن دائر کی، جس کو عدالت نے قابلِ سماعت قرار دیتے ہوئے متعلقہ حکام کو نوٹسز جاری کردیے۔ پولیس رپورٹ کے مطابق عبید کے ٹو دو پولیس افسران محمد ریحان اور نثار احمد کے قتل میں ملوث ہے، جو کرائم برانچ میں ذمہ داریاں انجام دے رہے تھے۔

عدالتی فیصلے سے متعلق جاننے کے لیے درج ذیل خبر پر کلک کریں۔

نائن زیرو چھاپہ کے 54 مقدمات کا فیصلہ جاری، درجنوں کارکنان 6 سال بعد بے گناہ ثابت

اپنا تبصرہ بھیجیں: