13 جولائی جمہوریت کا سیاہ ترین دن سوشل میڈیا پر ٹاپ ٹرینڈ

13 جولائی جمہوریت کا سیاہ ترین دن سوشل میڈیا پر ٹاپ ٹرینڈ

سماجی رابطے اور مائکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر پاکستان ٹرینڈ میں اس وقت دوسرے نمبر پر  #13JulyBlackDayOfDemocracy دوسرے نمبر پر ٹاپ ٹرینڈ کررہا ہے، جبکہ صفِ اول میں یوم شہدا کشمیر کو خراج تحسین پیش کرنے کا ٹرینڈ ہے۔

تیرہ جولائی جمہویت کا سیاہ ترین دن کا ہیش ٹیگ مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والے سوشل میڈیا ایکٹیویسٹ چلار ہے ہیں، مگر یہ کیوں ہے، اس بارے میں شاید آپ بھول گئے ہوں مگر فکر کی بات نہیں ہم یاددہانی کرادیتے ہیں۔

سنہ 2018 ، 13 جولائی کو مریم نواز شریف اپنی بیمار والدہ اور والد نوازشریف اپنی بیمار اہلیہ کلثوم نواز کو بستر مرگ پر برطانیہ چھوڑ کر پانامہ کیس میں عدالتوں کا سامنا کرنے کے لیے پاکستان پہنچے، باپ بیٹی کو ایئرپورٹ سے ہی تحویل میں لے کر منتقل کردیا تھا ، جس کے بعد انہیں حوالات کے پیچھے جانا پڑا اور پھر کلثوم نواز بھی دار فانی سے کوچ کرگئیں۔

مسلم لیگ ن کا دعویٰ ہے کہ نواز شریف اور مریم پاکستان میں جمہوریت کی بحالی کے لیے کلثوم نواز کو بستر مرگ پر چھوڑ کر واپس پاکستان آئے تھے، مگر اوراق پلٹے جائیں تو کہی جگہ پر ڈیل کے ساتھ خاموشی اور رہائی پھر لہجے میں تلخی نظر آتی ہے۔

ماں کی قربانی دینے کے بعد مریم نواز آج بھی ووٹ کو عزت دو بیانیے کے ساتھ بظاہر کھڑی نظر آتی ہیں جبکہ شہبازشریف گروپ کو مبصرین اس بیانیے کا مخالف اور اسٹیبشلمنٹ سے نرم گوشہ رکھنے والا قرار دیتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: