’ہم ٹویٹر پر ملے‘

’ہم ٹویٹر پر ملے‘

سماجی رابطے اور مائیکربلاگنگ پلیٹ فارم ٹویٹر پر روزانہ کسی نہ کسی مضوع، مسئلے پر ہیش ٹیگ چل رہے ہوتے ہیں، جن میں لوگ اپنا حصہ ڈالتے ہیں۔

ٹویٹر ہیش ٹیگ کا اب ایک اور بڑا فائدہ یہ ہوگیا کہ الیکٹرانک میڈیا یہاں بننے والے ایشو کو نہ صرف کوریج دیتا ہے بلکہ اس پر بھرپور آواز بھی اٹھاتا ہے، جہاں سوشل میڈیا بہت سو کے لیے تکلیف کا باعث ہے وہیں متعدد کیسز اسی پلیٹ فارم سے حل بھی ہوئے ہیں۔

حال ہی میں اسلام آباد کے گیسٹ ہاؤس میں پیش آنے والا واقعہ قابل ذکر ہے جس میں پانچ لڑکوں نے مل کر ایک لڑکے اور لڑکی کو چار ماہ قبل ہراساں کیا، اُس کی برہنہ ویڈیوز بنائیں اور پھر 13 لاکھ روپے سے زائد رقم بطور بھتہ وصول کی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر جب یہ ویڈیو شیئر ہوئی تو دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی، جس کے بعد انتظامیہ نے متعلقہ لڑکوں کو گرفتار کرلیا، جبکہ جوڑے نے اب شادی کا اعلان کیا اور وزیراعظم عمران خان نے بھی اس کا نوٹس لے کر ملزمان کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دیا۔

ٹویٹر پر روزانہ ایسے دلچسپ ہیش ٹیگ بھی بنتے ہیں، جن سے لوگوں کی حسین یادیں وابستہ ہوتی ہیں، آج پاکستان میں اسی طرح کا ایک ہیش ٹیگ #WeMetOnTwitter تیسرے نمبر پر اس وقت ٹرینڈ کررہا ہے، جس کو استعمال کر کے صارفین اپنی دلچسپ یادیں شیئر کررہے ہیں۔

ایک خاتون نے اپنے ٹویٹ میں بتایا کہ اُن کی ٹویٹر پر ایک لڑکے سے ملاقات ہوئی، جس کے بعد دونوں ازدواجی بندھن میں بندھ گئے۔

اس اور پوسٹ وائرل ہورہی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اب جانو کی تلاش چھوڑ کر جانور تلاش کریں۔ یہ بقرہ عید کی مناسبت سے ہے۔

اسی طرح ایک اور پوسٹ میں پاکستانی نوجوان کی ویڈیو وائرل ہورہی ہے جس میں وہ غمزہ حالت میں ہے مگر بال کاڑنے کے بعد چشمہ لگا کر ایسے مسکراتا ہے جیسے اُسے کوئی غم نہیں، اس پوسٹ کا مقصد یہ ہے کہ لڑکا تاحال سنگل ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: