‘صوبے کے نعروں سے دل برداشتہ ہوجائیں تو پی ایس پی میں شمولیت اختیار کرلیں’

مہاجر صوبے اور متروکہ سندھ کی توانا آواز، پی ایس پی میں شامل

کراچی: دبئی میں مقیم رہتے ہوئے مہاجر صوبے یا متروکہ سندھ مہم چلانے والے بلاگر کراچی پہنچتے ہی پاک سرزمین پارٹی میں شامل ہوگئے۔

دانش قاضی نے پانچ ستمبر کو انیس قائم خانی اور مصطفی کمال سے ملاقات کی، جس کے بعد انہوں نے ایک بار پھر سیاست شروع کرنے کے لیے پی ایس پی کا انتخاب کیا۔

دانش قاضی کی تصویر سامنے آنے کے بعد انہیں سننے اور فالو کرنے والوِ نے سوالات کی بوچھاڑ کردی۔

بیشتر کا سوال یہی تھا کہ اب صوبے کا کیا ہوگا۔ ایک صارف نے لکھا کہ دانش قاضی شمولیت سے پہلے رضا ہارون اور انیس ایڈوکیٹ سے ملاقات کرلیتے تو یہ فیصلہ نہ کرتے۔

دانش قاضی کے چند فالوورز جہاں ان کے اس فیصلے ہر نالاں نظر آئے وہیں ماضی کے دوستوں نے انہیں نیا سفر شروع کرنے پر مبارک باد اور نیک تمنائیں پیش کیں۔

طیب میمن نے لکھا کہ اس بات سے کوئی فرق نہیں پڑتا ، آپ کس پلیٹ فارم ہر ہیں، ہاں کمیونٹی کے لیے کام کرتے رہیں۔

نازش علوی نے دانش قاضی کے فیصلے پر لکھا کہ صوبہ تو نہیں بنا مگر آپ صوبے کے خلاف پارٹی بن گئے۔

فواد رحمان نے طنزیہ انداز میں سوال کیا کہ “صوبے کے لیے کسی دوسرے مزدور کو رکھ لیں”۔

پاک سرزمین پارٹی کے ترجمان نے دانش قاضی کی شمولیت کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ باشعور لوگوں کا انتخاب مصطفی کمال ہیں کیونکہ مستقبل پی ایس پی کا ہی ہے۔

دانش قاضی نے پی ایس پی میں شمولیت اور شاندار استقبال ہر مصطفی کمال اور پوری ٹیم کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے ایک اور ٹویٹ میں ایم کیو ایم پاکستان اور مہاجر قومی موومنٹ (حقیقی) کے کارکنان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ‘ہچھلے تین ساہوں کے دوران آج کی مہاجر قیادتوں سے ملاقات کی، کون کہاں کھڑا ہے، اس پر جلد بات ہو گی اور آپ کے ذینوں کے بت توڑ دیے جائیں گے’.۔

انہوں نے ایم کیو ایم اور حقیقی کے کارکنان کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا کہ وی اہنے رہنماؤں کے صوبے کے نعروں پر نظر رکھیں اور جب دلبرداشتہ ہوجائیں تو یم یعنی پی ایس پی میں شمولیت اختیار کرلیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: