کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی نجکاری کے خلاف مزاحمت کا اعلان

کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کی نجکاری کے خلاف مزاحمت کا اعلان

یونائیٹڈ ورکرز یونین واٹر بورڈ کی نجکاری کے خلاف جدوجہد میں ہراول دستے کا کردار ادا کرے گی۔ سینٹرل کمیٹی کے اجلاس میں جوزف صنم، پنھل مگسی، اکرام خان، اکبر معید یوسگی، ناظم خان، چن زیب اور دیگر نے خطاب کیا۔

کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ یونائیٹڈ ورکرز یونین کی سینٹرل کمیٹی کا اہم اجلاس اکرام ہاؤس میں چیئرمین جوزف صنم کی زیر صدارت منعقد ہوا۔ اس موقع پر کمیٹی کے اراکین نے اپنی اپنی آراء کا اظہار کیا۔ اس سلسلے میں طے پایا کہ چونکہ نجکاری کا معاملہ نہایت اہم ہے تو اس سلسلے میں یونائیٹڈ ورکرز یونین جدوجہد میں ہراول دستے کا کردار ادا کرے گی۔

چیئرمین جوزف صنم نے سینٹرل کمیٹی کے اراکین کا اکثریتی رائے سے نجکاری کی جدوجہد میں اہم کردار ادا کرنے کی منظوری پر ان کا شکریہ ادا کیا اور فیصلے کا اعلان کیا کہ آج ہونے والے احتجاج میں یونائیٹڈ ورکرز یونین بھرپور حصہ لے گی۔ صدر پنگھل مگسی نے کہا کہ 1996 سے واٹر بورڈ کی پرائیوٹائزیشن کے حوالے سے منصوبہ بندی کی جارہی ہے۔ یونائیٹڈ ورکرز یونین نے ماضی میں پرائیوٹائزیشن کے عمل کی مخالفت کی تھی آئندہ بھی ہم مزاحمت کریں گے۔ جنرل سیکریٹری اکرام خان نے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اکثریت رائے کے فیصلے کو مدنظر رکھتے ہوئے پرائیوٹائزیشن کے خلاف بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔ اجلاس سے اکبر معید یوسفی، چن زیب، ناظم خان، ارشد اعوان، کامریڈ امرجلیل مگسی، ولی بلوچ، شاکر علی، یعقوب قندھاری، وحید بلوچ، ریحان الٰہی، ناصر خان، رزاق بلوچ، زبیر انصاری، ہارون مگسی، تاج الرحمن، عرفان خان ار انچارج میڈیا سیل اشرف اعوان نے بھی خطاب کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: