سال نو کی آمد، کراچی میں‌ دفعہ 144 نافذ، ہوائی فائرنگ پر اقدام قتل کا مقدمہ درج ہوگا، کتنی سزا ہوگی؟‌ جانیے

سال نو کی آمد، کراچی میں‌ دفعہ 144 نافذ، ہوائی فائرنگ پر اقدام قتل کا مقدمہ درج ہوگا، کتنی سزا ہوگی؟‌ جانیے

 کراچی میں سال نو کے موقع پر سخت سیکیورٹی اقدامات کیے گئے ہیں، سی ویو جانے والے راستے پر اہلکار تعینات ہوں گے جبکہ بغیر سائلنسر والی کسی موٹر سائیکل کو نہیں چھوڑا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق سال نو کے موقع پر ڈسٹرکٹ ساؤتھ میں سخت سیکیورٹی اقدامات کیے گئے ہیں، ایس ایس پی ساؤتھ زبیر نذیر کا کہنا ہے کہ مجموعی طور پر 2 ہزار 250 اہلکار تعینات کیے جائیں گے، مختلف راستوں پر 1 ہزار 557 افسران و اہلکار ڈیوٹی انجام دیں گے۔

ایس ایس پی کا کہنا ہے کہ ہوائی فائرنگ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی، اقدام قتل سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ ساؤتھ میں 6 پولیس لائنز ہیں، کوئی پولیس اہلکار یا اس کا رشتہ دار فائرنگ نہ کرے، پولیس لائنز سے باقاعدہ سرٹیفکٹ لیے گئے ہیں، مختلف راستوں پر ناکے لگائے جائیں گے۔

ایس ایس پی کے مطابق حساس مقامات کی چھتوں پر پولیس اہلکار تعینات ہوں گے، سی ویو پر ایس ایس یو کے اہلکار بھی تعینات ہوں گے۔ تمام حساس مقامات پر نفری تعینات کی جائے گی۔ بغیر سائلنسر والی کسی موٹر سائیکل کو نہیں چھوڑا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پولیس سیکیورٹی کو مجموعی طور پر 9 سیکٹرز پر بنایا گیا ہے، ایف ٹی سی سے دو دریا، 3 تلوار سے اختر کالونی کالا پل تک 11 افسران موجود ہوں گے۔

دوسری جانب کمشنر کراچی اقبال میمن نے سال نو کے موقع پر شہر میں دفعہ 144 نافذ کردی، دفعہ 144 ہوائی فائرنگ کے واقعات کے باعث نافذ کی گئی ہے جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا۔

کمشنر کراچی کا کہنا ہے کہ ہوائی فائرنگ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

کمشنر کراچی کا کہنا ہے کہ تمام حساس مقامات پر پولیس اور رینجرز تعینات کی جائےگی، ایمبولینس اور فائر بریگیڈ حساس مقامات پر پولیس پوائنٹس پر موجود رہیں گی۔

انہوں نے کہا کہ تمام بڑے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کی جائے، اقبال میمن نے سی وی اور دیگر حساس مقامات پر ٹریفک کنٹرول کے لیے پلان بنانے کی ہدایت کی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سندھ پولیس نے سال نو کے موقع پر شہریوں کے لیے وارننگ پیغام جاری کرتے ہوئے کراچی پولیس آفس میں مانیٹرنگ ٹیم تشکیل دی تھی۔

سال نو پر فائرنگ، گرفتار ہونے والے کو کتنی سزا ملے گی؟

سندھ پولیس نے سال نو کے موقع پر شہریوں کے لیے وارننگ پیغام جاری کرتے ہوئے کراچی پولیس آفس میں مانیٹرنگ ٹیم تشکیل دے دی۔

ترجمان پولیس کا کہنا ہے کہ فائرنگ میں ملوث افراد کے خلاف اقدام قتل کے تحت مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، مقدمے میں دیگر دفعات کو بھی شامل کیا جائے گا، ناقابل ضمانت جرم کی سزا 10 سال قید ہوگی۔

پولیس نے شہریوں سے اپیل کی کہ فائرنگ کرنے والے عناصر کی ویڈیو یا شکایت 15 پر کی جائے۔

ترجمان کراچی پولیس نے کہا کہ گزارش ہے کہ خوشیوں کو ماتم میں نہ بدلیں، ویڈیو 0343-5142770 پر ارسال کی جاسکتی ہیں، شکایات موصول ہونے پر بلا امتیاز کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: