میری اچھی صحت کیلیے روزہ کیوں رکھا، ہندو شوہر نے بیوی کے جسم کو چاقو سے لہولہان کردیا

ہردوئی: کروا چوتھ کے دن جب بہت سی خواتین روزہ رکھ کر اپنے شوہروں کی لمبی عمر کے لیے دعائیں مانگ رہی تھیں، اتر پردیش ہردوئی میں ایک شخص نے اپنی بیوی کو متعدد بار چاقو مار کر زخمی حالت میں چھوڑ گیا۔

یہ واقعہ ہردوئی کے آزاد نگر، کوتوالی علاقے میں پیش آیا، جہاں مونی گپتا نامی متاثرہ، جو اپنے شوہر کے لیے کروا چوتھ کا روزہ رکھ رہی تھی، پر اس کے شوہر منوج نے ایک درجن سے زیادہ بار حملہ کیا۔

پولیس کے مطابق بچے کوچنگ گئے تھے۔ اچانک ملزم شوہر آیا اور بیوی پر چھریوں سے حملہ کرنا شروع کر دیا۔ اس نے اسے ایک درجن سے زیادہ بار چاقو مارا جس سے وہ شدید زخمی ہو گیا۔

متاثرہ کی چیخ و پکار سن کر پڑوسی گھر پہنچے تو ملزمان فرار ہوگئے۔

پولیس کو اطلاع ملتے ہی انہوں نے آکر متاثرہ کو میڈیکل کالج میں داخل کرایا، جہاں ڈاکٹروں نے اس کی حالت بدستور تشویشناک بتائی۔

متاثرہ کے اہل خانہ نے الزام لگایا ہے کہ اگرچہ دونوں کی شادی کو 22 سال ہوچکے ہیں لیکن ملزم منوج کچھ عرصے سے مونی کو ہراساں کررہا تھا۔ اس نے تین دن پہلے اس کی پٹائی بھی کی، جس کے بعد اس نے پولیس سے شکایت کی تھی۔

جرم کے پیچھے چھپا اصل مقصد ابھی تک معلوم نہیں ہے، اور کیس میں مزید تحقیقات جاری ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: