پلی بارگین کرنے والے کی خیر نہیں، صدر مملکت کا حکم جاری

اسلام آباد: صدر مملکت ممنون حسین نے نیب کا ترمیمی آرڈیننس جاری کردیا ہے، جس کے تحت پلی بارگین کا اختیار چیئرمین نیب سے واپس لے کر عدالت کے سپرد کردیا گیا ہے۔

میڈیا اطلاعات کے مطابق صدر مملکت نے نیب ترمیمی بل 2017 جاری کیا، جس کا اطلاق آج رات 12 بجے کے بعد سے شروع ہوجائے گا اور پلی بارگین کرنے والوں کو سخت سزا دی جائے گی۔

ترمیمی آرڈیننس میں پلی بارگین کے حوالے سے اہم فیصلہ کیا گیا ہے، جس کے تحت اب چیئرمین نیب پلی بارگین کا حق استعمال نہیں کرسکتا تاہم اس فیصلے کا اختیار عدالت کے سپرد کردیا گیا ہے۔

نیب ترمیمی آرڈیننس میں کہا گیا ہے کہ کوئی بھی شخص پلی بارگین کے بعد زندگی بھر عوامی عہدے کے لیے نااہل ہوگا جبکہ سرکاری ملازم کو اُس کی نوکری سے برطرف کردیا جائے گا۔

ترمیمی آرڈیننس حکومت کی جانب سے پیش کیا گیا تھا، اب یہ بل قومی اسمبلی اور سینیٹ سے منظور کروایا جائے گا جس کے بعد یہ قانونی صورت اختیار کرجائے گا، تاہم ماضی میں ہونے والے پلی بارگین مقدمات میں کوئی ردوبدل نہیں کی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں:

اپنا تبصرہ بھیجیں