نئی فوجی قیادت سے کوئی ریلیشن شپ نہیں, عمران خان

لاہور : چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومت اپریل میں الیکشن کرانے پر مجبور ہو جائے گی،نئی فوجی قیادت سے کوئی ریلیشن شپ نہیں۔پرویز الٰہی نے ہمارے ساتھ وفا دار نبھائی،ہمیں پرویز الٰہی کو وفاداری واپس کرنی ہے اس لیے وہ ہماری پارٹی کا حصہ بن جائیں۔

عمران خان نے برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ پنجاب اور خیبر پختو نخوا اسمبلیاں تحلیل کر دی ہیں۔
سابق وزیر اعظم نے پی ڈی ایم کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وفاقی حکومت نیلامی کے ذریعے اقتدار میں آئی الیکشن سے نہیں۔شہباز شریف حکومت ہارس ٹریڈنگ سے آئی،حکومت نے معیشت کا بیڑا غرق کر دیا اور ہم دلدل میں ڈوبتے جا رہے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ سری لنکا جیسی صورتحال سے بچنے کا حل صرف شفاف الیکشن ہیں۔عمران خان نے قومی اسمبلی میں نگراں سیٹ اپ کیلئے حکومت سے مشاورت کا عندیہ بھی دیا۔

دوسری جانب چئیرمین پی ٹی آئی عمران خان پاکستان کو معاشی گرداب سے نکالنے کے لیے متحرک ہو گئے۔ معاشی بحران کے حل کے لیے عمران خان نے تجاویز تیار کرنے کی ہدایت کر دی۔عمران خان کی ہدایت پر معاشی ٹیم اکنامک پیپرز تیار کرے گی،معاشی ٹیم میں سابق وزیر خزانہ شوکت ترین، تیمور جھگڑا ، مزمل اسلم اور حماد اظہر شامل ہیں۔ پارٹی کے منشور میں بھی اکنامک پیپرز کی تجاویز کو شامل کیا جائے گا،انتخابی مہم میں ملک کے معاشی بحران سے نکلنے کا واحد حل قوم کو بتایا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: