پاکستان مسلم لیگ (ن) وزراء کا بڑا فیصلہ

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) ملک کو درپیش معاشی مشکل حالات کے پیش نظر بغیر تنخواہ کے کام کرنے کا فیصلہ کر لیا۔
زرائع کے مطابق پاکستان مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے وزیروں کا بڑا فیصلہ سامنے آیا ہے جس کے تحت اب لیگی وزرا بغیر تنخواہ کام کریں گے۔

مسلم لیگ (ن) کے وزرا نے وزیراعظم شہباز شریف سے ملاقات میں بغیر تنخواہ کام کرنے کا کہا ۔

وزراء نے یہ فیصلہ ملک کو درپیش معاشی مشکل حالات کے پیش نظر قومی جذبے کے تحت کیا۔بارہ وفاقی وزراءکا تعلق پاکستان مسلم لیگ (ن) سے ہے ۔

تین وزرائے مملکت کا تعلق پاکستان مسلم لیگ (ن) سے ہے۔ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے وفاقی وزرا، وزرا مملکت رضاکارانہ بنیادوں پر کام کریں گے۔

وزیراعظم پہلے ہی 14معاونین خصوصی کی بلامعاوضہ کام کرنے کی درخواست منظور کرچکے ہیں۔

ملک کی تاریخ میں پہلی مثال ہے کہ اتنی بڑی تعداد میں کابینہ کے ارکان بلامعاوضہ کام کریں گے۔
وزیراعظم کے پرنسپل سیکریٹری ڈاکٹر سید توقیر شاہ کے دستخطوں سے نوٹیفیکیشن جاری کردیاگیا۔وزیراعظم کے ترجمان کے مطابق معاونین نے وزیراعظم شہباز شریف سے کہا تھا کہ وہ عوام کی خدمت کے جذبے سے کام کرنے کے خواہشمند ہیں۔ وہ اس مشکل صورتحال میں بلامعاوضہ خدمات انجام دیں گے جسے وزیراعظم نے منظورکر لیا۔

بلامعاوضہ کام کرنے کی درخواست دینے والے معاونین درخواستگزاروں میں خصوصی شزہ فاطمہ خواجہ، سینیٹر حافث عبدالکریم ، روبینہ خورشید عالم، شیخ فیاض الدین ، جنید انوار چوہدری، رانا مبشر اقبال، ملک محمد احمد خان، صادق افتخارم روبیہ عرفان، ملک عبدالغفور ڈوگر ، فہد ہارون، سردار شاہ جہاں یوسف، سابق سفیر محمد صادق اور نعمان لنگڑیال شامل ہیں۔

وزیراعظم کی جانب سے بغیر تنخواہ کے کام کرنے والوں کی حوصلہ افزائی کی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: