کراچی میں ڈاکو راج : مزید 3 شہری زندگیوں سے ہاتھ دھو بیٹھے

کراچی: کراچی میں بدستور ڈاکو راج قائم , مزید 2 شہری ڈکیتی مزاحمت پر زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے جبکہ پولیس نے شہر کے مختلف علاقوں میں مقابلوں کے دوران 8 زخمی ملزموں سمیت 10 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

اسٹیل ٹاؤن تھانے کی حدودو سومار گوٹھ کرسچن کالونی کے قریب پولسی نے خفیہ اطلاع پر ملزمان کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کی تو ملزمان نے پولیس کو دیکھ کر فائرنگ شروع کردی۔

ایس یس پی ملیر عرفان بہادر کے مطابق مقابلے کے دوران 4زخمی ڈاکووں سمیت 5 ڈکیت گرفتار کیے گئے ۔ گرفتار ڈاکووں کے قبضے سے 5 پستول اور لوٹی ہوئی رقم 15 لاکھ روپے برآمد ہوئے ۔ مقابلے میں زخمی حالت میں گرفتار ڈکیت گینگ نے 6 فروری کو گلشن حدید سے واردات میں 47 لاکھ روپے لوٹے تھے ۔

مقابلے میں زخمی ہونے والے ڈکیت میں محمد سجاول ،امیر خان، محمد شاہد ، محمد صابر ولد میاں اور غلام محمد شامل ہے ۔ گرفتار ڈکیت کے دو ساتھی شعیب ،معین موقع سے فرار ہو گئے۔ زخمی ملزمان کو طبی امداد کے لیے جناح اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

دوران تفتیش ملزمان نے شاہ لطیف ٹاؤن، بلدیہ ٹاؤن، سعید آباد، اورنگی ٹاؤن اور کراچی کے دیگر علاقوں میں وارداتیں کرنے کا اعتراف کیا ۔سائٹ سپر ہائی وے صنعتی ایریا کے علاقے فیصل گوٹھ اسکیم 33 میں پولیس نے مقابلے کے بعد ایک زخمی ملزم حارث اور اسکے ساتھی عادل کو گرفتار کرکے انکے قبضے سے اسلحہ اور دیگر سامان برآمد کرلیا۔ ملزمان رہایگروں سے لوت مار کرہے تھے ۔

ملزمان کے قبضے سے پستول اور موٹر سائیکل برآمد ہوئی ۔ زخمی ملزم کو اسپتال منتقل کیا گیا اور واقعے کی مزید جانچ جاری ہے ۔ زمان ٹاؤن تھانے کی حدود کورنگی کوسٹ گارڈ چورنگی کے قریب پولیس نے مقابلے کے بعد دو ملزموں وسیم اور اسد کو زخمی حالت میں گرفتار کر کے انکے قبضےس ے دو پستول اور ایک موٹر سائیکل برآمد کرلی۔ ملزمان شہریوں سے لوٹ مار کر رکے فرار ہوئے تھے کہ اس دوران پولیس پہنچی تو انکے درمیان مقابلہ ہوا۔

سائٹ سپر ہائی وے صنعتی ایریا کے علاقے سپر ہائی وے الحبیب ریسٹورنٹ کے قریب پولیس نے مقابلے کے بعد ایک ملزم کامران ولد اقبال کو زخمی حالت میں گرفتار کر کے اسکے قبضےےاسلحہ اور دیگر سامان برآمدکرلیا جبکہ اسکا ساتھی موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: