24 گھنٹوں کے دوران 136 اسٹریٹ کرائم کی وارداتیں رپورٹ

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کو گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران جرائم کی روک تھام کے حوالے سے کیے جانے والے اقدامات پر ایڈیشنل آئی جی کراچی جاوید اوڈھو نے اپنی رپورٹ پیش کی ۔

وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران شہر بھر میں 136اسٹریٹ کرائم کی وارداتیں رپورٹ ہوئیں، جن میں65واقعات موبائل،نقدی چھیننے اور ایک کار چھینی گئی جبکہ ایک چوری کی گئی اور 5 موٹرسائیکلیں چھینی گئیں جبکہ 63 موٹرسائیکلیں چوری ہونےکی وارداتیں شامل ہیں۔ وزیراعلیٰ سندھ کو بتایا گیا کہ ڈکیتی کے دوران مزاحمت پر دو افراد زخمی ہوئے جن کا تعلق عزیز آباد اور جمشید ٹاؤن تھانوں کی حدود سے ہے۔

کراچی چیف نے بتایا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پولیس اور جرائم پیشہ افراد کے درمیان دومقابلے ہوئے جن کے دوران دو جرائم پیشہ افراد زخمی حالت میں گرفتار کئے گئے جبکہ12 اسٹریٹ کرمنلز،چوروں کو رنگے ہاتھوں گرفتار کیا گیا۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ مجموعی طورپر120ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ،جن میں20 اسٹریٹ کرمنلز، ڈاکو،6کارلفٹرز،6 افراد کوغیر قانونی اسلحہ رکھنے پر،43 منشیات فروش، سپلائر جبکہ43دیگر جرائم میں ملوث افراد کو گرفتار کیاگیا۔

وزیراعلیٰ سندھ کو بتایاگیا کہ پولیس نے مختلف چھاپوں ،کارروائیوں کے دوران14 غیر قانونی اسلحہ ،18 کلو گرام چرس، 631 گرام آئس، 103 گرام ہیروئن، 15 چوری کے موبائل فون اور19 مسروقہ موٹرسائکلیں برآمد کی گئیں، دریں اثناپاکستان رینجرز سندھ اور پولیس نے انٹیلی جنس معلومات کی بنیاد پر مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے کراچی کے علاقے لیاقت آباد نمبر 9 سے ڈکیتی،اسٹریٹ کرائمز اور منشیات فروشی میں ملوث ڈکیت گروہ کا سرغنہ ملزم فہیم عرف پہلوان عرف موٹا کو گر فتار کر لیا۔

ابتدائی تفتیش کے دوران ملزم نے2013 سے جہان آباد، لیاری، پرانا گولیماراور افغان کیمپ سپر ہائی وے سے بھاری مقدار میں منشیات لا کر لیاقت آباد اور گلبرگ ٹاؤن کے علاقوں میں فروخت کرنے کا اعتراف کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: