ملکی حالات اس وقت انتخابات کے متحمل نہیں ، طاہر اشرفی

لاہور: چیئرمین پاکستان علماکونسل و نمائندہ خصوصی وزیر اعظم برائے بین المذاہب ہم آہنگی و مشرق وسطی حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ ملکی حالات اس وقت انتخابات کے متحمل نہیں ہیں، پاکستان کے استحکام کیلئے سب کو ایک ہونا ہو گا، آئین اور قانون کی بالادستی میں ہی پاکستان کے تمام مسائل کا حل چھپا ہے، ملک دشمن بیرونی طاقتیں دفاعی و سیکورٹی اداروں کے خلاف پروپیگنڈا کر رہی ہیں۔

ان کاکہناتھاکہ تمام سیاسی جماعتیں مل کر بات چیت کے ذریعے مسائل کا حل تلاش کرنے کی کوشش کریں، سیاسی و مذہبی قیادت مشاورت سے میثاق پاکستان دے، میثاق پاکستان کے ذریعے آئندہ پچیس سال کی حکمت عملی طے کی جائے، علما معاشرے میں عدم برداشت کے رجحان کے خاتمے کیلئے کردار ادا کریں، عمران خان اور پی ٹی آئی قیادت امن و استحکام کیلئے بات چیت کا حصہ بنے، ملک کی بہتری کیلئے تمام مذہبی و سیاسی جماعتیں اپنا اپنا رول ادا کریں، دہشت گردی کے خاتمے کیلئے قومی ایکشن پلان پر مکمل عملدرآمد کیا جائے۔

لاہور پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ وہ وزیر اعظم محمد شہباز شریف سے اپیل کرتے ہیں کہ آل پارٹیز کانفرنس بلائی جائے اور عمران خان سے اپیل ہے کہ ملکی مفاد کیلئے اے پی سی میں شریک ہوں۔

طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ صدر عارف علوی کو اے پی سی کیلئے بھرپور کردار ادا کرنا چاہئے،اگر سیاسی و مذہبی جماعتیں ایک پلیٹ فارم پر نہیں بیٹھیں گی تو امن و امان کی فضا قائم نہیں ہو سکتی۔

ان کا کہنا تھا کہ اب میثاق پاکستان دینا ہوگا، پچیس سالوں پر مبنی معاشی، خارجہ و داخلہ پالیسی طے کی جائے، طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ انتہا پسندی و دہشت گردی کے خاتمے کیلئے قومی ایکشن پلان موجود ہے اس پر مکمل عملدرآمد کیاجائے، پاکستان دشمن قوتوں نے پلاننگ کرکے ملکی سلامتی اداروں و افواج پاکستان کے خلاف مہم شروع کررکھی ہے، پاکستان سے باہر قوتیں بیٹھی ہیں جو سلامتی کے اداروں ا ور قوم میں تقسیم چاہتے ہیں۔

طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ ماضی میں بھی مہم چلائی گئی مگر پہلے نہ آئندہ ایسی سازشیں کامیاب ہوں گی،ملک میں انتخابات کا بہت شور ہے علما کونسل براہ راست انتخابات میں شرکت نہیں کریں گے۔

طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ نظریات کے قریب شخصیات کو ووٹ دیں گے کیونکہ کروڑوں روپے الیکشن لڑنے کیلئے چاہئیں، انتخابی اصلاحات کیلئے تمام جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھاکیا جائے، عمران خان آٹھ سیٹوں سے جیت کر آئے تو سیٹیں چھوڑ دیں،پارلیمنٹ سے انتخابی اصلاحات منظور کروائی جائیں اور جیتنے والوں کو ہارنے والا تسلیم کرے، اگر آج الیکشن کروائے گئے تو ہارنے والا جیتنے والے کو تسلیم نہیں کرے گا ،اس کا واحدحل مذاکرات ہے ، اگر عمران خان سمجھتے ہیں کہ ان کی ذات تمام سیاسی قائدین سے بڑی ہے اور وہ کسی کے ساتھ بات چیت کیلئے نہیں بیٹھنا چاہتے تو اپنا نمائندہ مختص کردیں۔

طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ سانحہ اے پی ایس پر عمران خان محمد نوازشریف کے ساتھ بیٹھے تھے اگر کراچی میں پولیس اہلکاروں کے ساتھ دہشت گردی ہوئی اس معاملے پر کیوں نہیں سب بیٹھ سکتے، پاکستان علما کونسل کی سالانہ کانفرنس 28مارچ کو اسلام آباد میں ہوگی جس میں بیرون ممالک کے علما کرام ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ تاجروں سے اپیل ہے کہ منافع کم کرکے عوام کیلئے آسانی پیدا کریں، ذخیرہ اندوزی اسلام میں حرام ہے، مجسٹریٹ قیمتوں کو کم کروانے کیلئے بھرپور اقدامات کریں ،تاجر خود آگے بڑھ کر سستے بازار لگائیں تاکہ عام آدمی مہنگائی کے دور میں روزہ رکھ سکے جس کا ثواب تاجروں کو بھی ملے گا۔طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ ملک میں لاکھوں بیٹیاں جہیز کی وجہ سے گھر بیٹھی ہیں، طلاق کے بڑھتے واقعات پر عدالتوں میں جگہ نہیں، بارات چھوٹی رکھی جائے بڑھتی ہوئی آبادی پر کنٹرول کیاجائے اور اس کیلئے ملک بھر میں تربیتی نشستوں کا اہتمام کیاجائے گا۔

طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتا ہوں کہ نہیں چاہتے نظام عدل سے لوگوں کا اعتماد اٹھ جائے،لاکھوں مقدمات عدالتوں میں ہیں رہائیاں ملتوی ہو رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انتہا پسندی، دہشت گردی، فرقہ واریت کے خاتمے کیلئے ہر جماعت سے بات کریں گے۔طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ ہمارے دو برادر اسلامی ممالک ترکیہ و شام اس وقت سخت امتحان سے گزر رہے ہیں۔وزیر اعظم محمد شہباز شریف کی ترکیہ جاکر ان کے زخموں پر مرہم رکھنا قابل تحسین عمل ہے، طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ اسرائیل نئی آبادیاں بنا رہا ہے جس کی عالم اسلام مذمت کررہا ہے، کشمیر و فلسطین سے مسلسل خون بہہ رہا ہے۔

طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ عمران خان خود احتسابی کریں اور ساتھیوں پر نظر دوڑائیں جن کے رویے اقدار سے گرے ہوئے ہیں،شیخ رشید بڑے سیاسی رہنما ہیں اس وقت قوم کو حوصلہ دینے کی ضرورت ہے گرانے کی ضرورت نہیں،عمران خان نے شیخ رشید کو سگار کا تحفہ دیا وہ اس سے انجوائے کریں، جب تک سیاستدان ایک ٹیبل پر نہیں بیٹھیں گے تو انتخابات نہیں ہوں گے،کراچی پولیس آفس پر حملے میں فیصل آباد کے اجمل مسیح نے قربانی دی اسے خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: