سی او سی رکن آصف خان کی گرفتاری، عامر خان نے وجہ بتا دی

نہ

ایم کیو ایم کے سینئر ڈپٹی کنوینئر عامر خان نے مرکزی عہدیدار اور ضمنی الیکشن میں متحدہ کے امیدوار آصف خان کی گرفتاری پر ذومعنی پیغام جاری کردیا۔

واضح رہے کہ آصف علی خان کو تین روز قبل گلشن اقبال سے نامعلوم افراد نیلی رنگ کی ویگو میں ساتھ لے کر گئے ہیں، جس کے بعد سے اب تک انکا کچھ معلوم نہیں ہے۔

ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی نے بھی سی او سی ممبر آصف علی خان کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کردیا۔

ایم کیو ایم کے مرکزی عہدیدار اور ضمنی الیکشن امیدوار گرفتار، تصدیق ہوگئی

ایم کیو ایم کے سابق رکن قومی اسمبلی اور شعبہ لیگل ایڈ کے ذمہ دار ایڈوکیٹ سلمان مجاہد نے دعوی کیا ہے کہ آصف علی خان کو گلشن اقبال پولیس نے اٹھا کر حراست میں رکھا ہوا ہے اور اب تک عدالت میں پیش نہیں کیا۔

اس سے قبل عامر خان نے گزشتہ روز آصف علی خان کی گرفتاری کے حوالے سے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ ‘سی او سی ممبر آصف علی خان بھائی دو روز قبل لاپتہ کردیئے گئےہیں انکا قصور صرف اتنا ہے کہ وہ 2011 میں میرے ساتھ ایم کیو ایم میں واپس آئے تھے’۔

ذرائع کو ملنے والی اطلاعات کے مطابق آصف علی خان کو عامر خان کا دست راز مانا جاتا ہے، وہ مہاجر قومی موومنٹ سے متحدہ میں عامر خان کے ساتھ 2011 میں واپس آئے تھے۔

اس کے بعد آصف علی خان دبئی سے کراچی منتقل ہوئے اور ایم کیو ایم کیلیے بہت متحرک کردار ادا کیا، عامر خان کے رابطہ کمیٹی میں آنے کے بعد انہیں اہم ذمہ داریاں ملیں جبکہ وہ مرکزی شعبے کے ذمہ دار بھی بنے۔

آصف علی خان کی گرفتاری کے بعد سے اب تک کسی۔ بھی ادارے نے گرفتاری کی تصدیق نہیں کی ہے تاہم ان کو گلشن اقبال کے قریب سے اٹھائے جانے کی سی سیٹی وی فوٹیج ضرور سامنے آئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: