شام: بارودی سرنگ کے دھماکے میں 9 شہری ہلاک

بیروت : شام میں شدت پسندوں کی بچھائی گئی بارودی سرنگ کے دھماکے میں نو شہری ہلاک ہو گئے ہیں۔

سرکاری خبررساں ادارے سانا کے مطابق سوموار کو بارودی سرنگ پھٹنے کا واقعہ وسطی صوبہ حماہ کے مشرق میں واقع دیہی علاقے السلامیہ میں پیش آیا ہے۔یہ بارودی سرنگ مبیّنہ طور پر داعش کے جنگجوؤں نے بچھائی تھی۔جب اس کے اوپرسے ان شامیوں کی کارگذری تو وہ دھماکے سے پھٹ گئی۔شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے کہا ہے کہ مقتولین صحرا میں کھمبیوں کی تلاش میں تھے۔ قبل ازیں 18 فروری کو ہمسایہ صوبہ حمص کے صحرا میں داعش کےایک مشتبہ حملے میں 68 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

برطانیہ میں قائم رصدگاہ کا کہنا ہے کہ داعش صحرائی فنگس (کھمبیوں) کی سالانہ کٹائی کا فائدہ اٹھا رہی ہے۔اس کافروری سے اپریل تک موسم ہوتا ہے۔حالیہ برسوں میں ملک کے وسطی، شمال مشرقی اور مشرقی علاقوں میں کھمبیوں کی کھدائی کے نتیجے میں خواتین اوربچوں سمیت کئی افراد اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔صدگاہ کے مطابق شام کی 12 سالہ لڑائی میں کھیتوں، سڑکوں اور یہاں تک کہ عمارتوں میں چھوڑے گئے دھماکاخیزمواد یا بارودی سرنگوں سے سیکڑوں شہری ہلاک اور ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں۔

اقوام متحدہ کاکہناہے کہ شام بھرمیں ایک کروڑ سے زیادہ افراد دھماکاخیزمواد سے آلودہ علاقوں میں رہتے ہیں۔مارچ 2011 میں حکومت مخالف مظاہروں کے وحشیانہ جبرکے خلاف شام کی جنگ میں اب تک پانچ لاکھ کے قریب افراد ہلاک اور لاکھوں بے گھر ہو چکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: