کورنگی کے نجی اسکول میں مبینہ طور پر اسرائیلی پرچم لہرانے پر شدید تنقید شروع

کراچی: کراچی کے علاقے کورنگی کے ناصرہ اسکول کی ایک تقریب میں طلبہ کی جانب سے مبینہ طور اسرائیلی جھنڈا لہرا دیا گیا ۔

واقعہ کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ہے جس میں دیکھا جاسکتا ہے قطار میں طلبہ کھڑے ہیں جن کے ہاتھوں میں مختلف ممالک کے جھنڈے ہیں جب کہ قطار میں کھڑا طالبعلم اسرائیلی جھنڈا تھامے ہوئے ہیں۔سوشل پر اسرائیل مخالف ملک پاکستان کے اسکول میں اسرائیلی جھنڈا لہرانے کی مذمت شروع ہوگئی ہے ۔

اسکول کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا گیا ہے، جب کہ ناصرہ اسکول انتظامیہ نے اس مسئلے پر تحریری وضاحت بھی جاری کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ناصرہ اسکول کورنگی نے طلباء میں بیداری پیدا کرنے کے لیے ماڈل یونائیٹڈ نیشنز (MUN) کا اہتمام کیا جس میں 30 سے ​​زائد ممالک کی نمائندگی کی گئی تھی اور 391 مندوبین نے مختلف عالمی مسائل اور امور پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے 15 کمیٹیوں میں حصہ لیا۔

بعض متعلقہ شہریوں کی جانب سے MUN میں شامل 32 ممالک میں سے ایک کے طور پر اسرائیل کی نمائندگی کے حوالے سے مسئلہ اٹھایا گیا ہے، جب کہ پاکستان فلسطینی کاز کی حمایت میں اسرائیل کو تسلیم نہیں کرتا۔

اسکول کے مطابق یہاں ہم یہ واضح کرنا چاہتے ہیں کہ مسئلہ فلسطین کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کے لیے، جو کہ اقوام متحدہ کی متعدد قرار دادوں کا حصہ ہے، ایک “سیاسی اور ڈی کالونائزیشن کمیٹی” تشکیل دی گئی جہاں مسئلہ فلسطین پر تفصیلی بحث کی گئی۔

تمام بڑے اسٹیک ہولڈر ممالک اس کمیٹی کا حصہ تھے جن میں پاکستان اور فلسطین بھی شامل تھے، جب کہ اسرائیل کی عدم موجودگی میں یہ بحث ممکن نہیں تھی۔

کمیٹی کے مباحثے کے دوران فلسطین کے لیے پاکستان کے مؤقف اور حمایت کو اجاگر کیا گیا، جو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ریاست کے مؤقف کی نقل کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: