جمہوری کلچرکے فروغ کیلئے کاوشیں جاری رکھیں گے،خالد مقبول

کراچی:متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے مرکز بہادرآباد پرکنوینرڈاکٹرخالد مقبول صدیقی سے غیرسرکاری تنظیموں، وکلا،انسانی حقوق اورسول سوسائٹی کے نمائندہ وفد “میڈی ایٹرز”نے اخترحسین،سابق نائب صدرسپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی سربراہی میں ملاقات کی،سینئرڈپٹی کنوینرزمصطفی کمال اورفاروق ستارنے وفد میں شامل سینئرصحافی مظہرعباس، صدرکراچی آرٹس کونسل احمد شاہ،صدرکراچی پریس کلب سعید سربازی،ہیومن رائٹس کمیشن آف پاکستان کے اسد اقبال بٹ جبکہ عورت فاونڈیشن کی مہنازرحمان اوردیگرکو ایم کیو ایم کے مرکزپرخوش آمدید کہا۔

وفد کے ارکان نے کہا کہ وہ 50 برس سے زائد عرصے سے ملک میں جمہوریت کیلئے جدوجہد کررہے ہیں اورنظرآرہا ہے کہ ملک میں سیاسی اختلافات اپنی انتہا کوچھورہے ہیں جس سے آئندہ انتخابی عمل مشکوک اورسیاسی و آئینی بحران پیدا ہوسکتا ہے،تمام سیاسی جماعتیں مل بیٹھ کرآل پارٹیزکانفرنس میں انتخابات کے فریم ورک اوراسکے وقت کے تعین کیلئے متفقہ لائحہ عمل ترتیب دیں۔

شرکاءسے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیو ایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی کے کنوینروڈپٹی کنوینرزنے سول سوسائٹی کے جمہوریت کو پروان چڑھانے کی کاوش کوسراہتے ہوئے انہیں کہا کہ انکے پیش کئے گئے تمام نکات کو رابطہ کمیٹی کے سامنے موضوع بحث رکھا جائیگا،متحدہ قومی موومنٹ ملک میں جمہوری کلچرکے فروغ کیلئے اپنی سپورٹ اورکاوشیں جاری رکھے گی۔

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی رابطہ کمیٹی نے نوابشاہ یونین کمیٹی نمبر6 میونسپل کارپوریشن ایچ ایم خواجہ میں چیئرمین اوروائس چیئرمین کے انتخابات کیلئے پیپلزپارٹی کی جانب بوگس ووٹنگ کرنے پرگہری تشویش کا اظہار کیا اورکہا کہ پولنگ اسٹیشن نمبر8 پرپیپلزپارٹی کے غنڈہ عناصرنے صبح 10:30 بجے کے بعد دھاوا بولا اورجعلی ووٹ ڈالے،پولنگ ایجنٹس نے انکو روکا تو پی پی کے غنڈوں نے پولنگ ایجنٹس کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا،پولیس غنڈوں کی پشت پناہی کرتی رہی،رابطہ کمیٹی نے چیف الیکشن کمشنرسے مطالبہ کیا کہ انتخابات کے نتائج کو فوری روکا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: