کراچی میں آٹے کے سنگین بحران کا خدشہ پیداہوگیا

کراچی: محکمہ خوارک نے فلور ملز کی اندرون سندھ سے خریدی گئی گندم کو ضبط کرلیا، جس کئے باعث کراچی شہر میں آٹے کے بحران کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ محکمہ خوراک سندھ اور فلور ملز کے درمیان کراچی میں گندم کی ترسیل پر تنازع شدت اختیار کر گیا، آٹا چکی مالکان کے مطابق کورنگی میں ملز کے لیے گندم لانے والے ٹرکوں پر محکمہ خوراک نے چھاپے مارے۔
محکمہ خوراک سندھ نے کورنگی اور کاٹھوڑ میں فلور ملز کی گندم کے ٹرک روک لیے اور اندرون سندھ سے خریدی گئی گندم کو ضبط کرلیا، جس کے باعث شہر میں آٹے کے بحران کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔
چیئرمین فلورملزایسوسی ایشن چوہدری عامر نے بتایا کہ 12 ٹرکوں پر لدی 500 ٹن سے زائدگندم ضبط کی گئی ہے ، کراچی کی70 سے زائد فلور ملز کواندرون سندھ سے گندم آتی ہے، فلارملزایکس مل 128 روپے فی کلو گرام آٹافراہم کررہی ہیں۔
چیئرمین ہول سیلر گروسرز عبدالرئو ف عیسیٰ کے مطابق کراچی میں چکی کا آٹا ایک سو پچاس سے ایک سو ساٹھ روپے فی کلو فروخت ہو رہا ہے ، ہول سیل مارکیٹ میں گندم کی قیمتوں میں اضافہ حکومت کی نااہلی ہے۔
گزشتہ ماہ بھی محکمہ خوراک سندھ نے فلور ملز سے گندم لانے والے 50 سے زائد ٹرالر روک لئے تھے ، چیئرمین فلور ملز ایسوسی ایشن چوہدری عامرنے کہاکہ کراچی میں گندم ختم ہوچکی ہے شہر میں آٹے کی قلت پیدا ہوگئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: