برطانوی شاہی خاندان نے تحفے میں ملے گھوڑے بیچ دئیے

لندن: برطانیہ کے بادشاہ چارلس سوئم اور ملکہ الزبتھ دوم نے دبئی کے شیخ محمد بن راشد المکتوم، سعودی عرب کے شہزادہ فیصل اور قطر کے الثانی خاندان سمیت قابل ذکر ریاستوں کو اپنے گھوڑے بیچ کر تقریبا2ملین پائونڈ کمائے ہیں جس کے بعد شاہی خاندان کے لئے بنائے گئے تحائف قبول کرنے کے رہنما اصولوں پر سوالات اٹھائے جا رہے ہیں۔

برطانوی اخبار کے مطابق بکنگھم پیلس نے دعویٰ کیا کہ یہ گھوڑے ان کے ذاتی تحائف تھے۔1978میں مغربی جرمنی کے سرکاری دورے کے دوران انہیں دو گھوڑے دیے گئے۔
دبئی کے امیر اور متحدہ عرب امارات کے وزیر اعظم شیخ محمد بن راشد المکتوم ملکہ برطانیہ کے ریسنگ اور افزائشی گھوڑوں کے سب سے بڑے سپلائر ہیں۔برطانوی شاہی خاندان کو پیش کیے گئے کم از کم34گھوڑے انہی کی طرف سے آئے ہیں۔
ایسٹیمیٹ نامی گھوڑا جس نے ملکہ کو روئل اسکوٹ میں2013کے گولڈ کپ میں ٹریک پر فتح دلائی کہا جاتا ہے کہ ان پانچ گھوڑوں میں شامل تھا جو پرنس شاہ کریم الحسینی آغا خان نے شاہی خاندان کو تحفے میں دیے تھے۔
ایک تحقیق کے مطابق الزبتھ کو کل41گھوڑے ملے جنہوں نے گزشتہ15سالوں کے دوران ریس میں حصہ لیا۔پچھلے دس سالوں میں ان میں سے29کو عوامی طور پر نیلامی کے لیے پیش کیا گیا اور کل1.93ملین پاونڈ حاصل کئے گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: