اسٹیبلشمنٹ نے شہری سندھ کو پیپلزپارٹی کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا، آفاق احمد

کراچی: مہاجر قومی موومنٹ (پاکستان) کے چئرمین آفاق احمد نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کے دباؤ میں وفاق نے کراچی والوں کی مردم شماری میں پوری گنتی نہ کرنے کافیصلہ کرلیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ اربن گریجویٹ فورم کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ آفاق احمد نے کہا کہ مردم شماری کے آنے والے نتائج میں کراچی دنیا کا واحد پورٹ اور انڈسٹریل سٹی ہوگا جسکی آبادی بڑھنے کے بجائے کم دکھائی جائے گی۔

آفاق احمدنے کہا کہ وفاق اور اسٹیبلشمنٹ نے عمران سے نمٹنے اور اس مقصد کیلئے پیپلزپارٹی کی حمایت برقرار رکھنے کیلئے کراچی کا مستقبل پیپلز پارٹی کے رحم و کرم پر چھوڑدیا ہے، اور یہ بات حکومت میں شامل تمام جماعتوں کو اچھی طرح معلوم ہے لیکن عوام کی آنکھ میں دھول جھوکنے کیلئے صوبائی اور قومی حکومت کو اعتماد میں لیکر باہمی رضامندی سے مردم شماری کے ممکنہ نتائج کے خلاف کھوکھلی بیان بازی کی جارہی ہے۔

آفا ق احمد نے کہا کہ جس وقت عمران حکومت میں مہاجروں کو ملازمتوں سے محروم رکھنے کیلئے کوٹہ سسٹم غیر معینہ مدت کیلئے پھر سے مسلط کیا گیا اس وقت بھی متحدہ حکومت میں وزارتوں کے ساتھ موجود تھی لیکن مہاجروں کے خلاف اس اقدام پر حکومت سے علیحدہ ہونے کے بجائے صرف اختلافی نوٹ لکھ حکومت سے چمٹی رہی،آج بھی مردم شماری پر نتائج سے آگاہ ہونے کے باوجود متحدہ بیان بازی سے مہاجر عوام کے ساتھ ہونے والی اس زیادتی پر دکھ کا ڈھونگ کررہی ہے۔

انہوں نے کہاکہ اگر ایم کیوایم مہاجروں کیساتھ مخلص ہے تو اسے مہاجروں کو مردم شماری میں شمار نہ کرنے پرصوبائی اور وفاقی حکومتوں سے علیحدہ ہوجانا چاہیے متحدہ کا حکومت سے چمٹے رہنے کا چندافراد کو فائدہ ہوسکتا ہے مہاجروں کو اسکا کوئی فائدہ نہیں۔

آفاق احمد نے کہا کہ کراچی والوں کا مردم شماری میں گنتی نہ کرنا انتہائی سنگین غلطی ہوگی جسکے مستقبل میں بھیانک نتائج سامنے آئیں گے۔

آفاق احمد نے کہا کہ یہ ایک قدرتی عمل ہے کہ لوگ صنعتی شہر میں روزگار کیلئے آتے ہیں اور سکونت اختیار کرتے ہیں جسکی وجہ سے دنیا میں صنعتی شہروں کی آبادی دوسرے شہروں سے کئی گناہ تیزی سے بڑھتی ہے، کراچی جیسے صنعتی شہر کی آبادی پوری گنتی کرنے کے بجائے کم کرکے دکھانے سے مستقبل میں عالمی برادری پاکستان کے ہر عمل کو شک کی نگاہ سے دیکھے گی۔

ان کا کہناتھاکہ کراچی کو پورانہ گننے سے غلط اعداد و شمارکی بنیادپر غلط منصوبہ بندی ہوگی اور آئندہ مردم شماری سے قبل کراچی میں لاقانونیت اپنے عروج پر ہوگی لوگ طاقت کے دم پر جینا چاہیں گے نتیجے میں قانون پسند، سفید پوش اور پڑھے لکھے شریف شہریوں کیلئے کراچی رہنے کے قابل نہیں رہے گا۔

آفاق احمد نے کہا کہ کراچی صرف مہاجروں کا مسئلہ نہیں ہے پورے پاکستان کا مسئلہ ہے، اس سے لاتعلق رہ کر پیپلز پارٹی کو اس کے مستقبل سے کھلواڑ کرنے کیلئے چھوڑنے کا مقصد پاکستان سے کھلواڑ کے مترادف ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: