پاکستان میں 40 غیرقانونی ایپس کیوں اور کس نے بند کر دیں ؟

اسلام آباد: ایس ای سی پی نے گوگل کی مدد سے 75 غیرقانونی ایپس میں سے 40 بند کرا دیں، باقی ایپس بھی 31 مئی تک گوگل پلے اسٹور سے ہٹا دی جائینگی۔

ایس ای سی پی نے نینولونزکےبزنس کیلئےفرانزک آڈٹ اوراین اوسی کا حصول لازمی قراردیدیا۔

ایس ای سی پی کے مطابق پاکستان میں بزنس کیلئے ایپس کو پی ٹی اے سے منظور شدہ آڈٹ فرم سے فرانزک آڈٹ کرانا ہوگااور اسی سرٹیفکیٹ کی بنیاد پر ایس ای سی پی این او سی جاری کرے گا۔

ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ایس ای سی پی خالدہ حبیب کےمطابق تقریبا 90 ارب روپے کے قریب ڈسبرسمینٹ ہو چکی ،اڑھائی لاکھ سے زیادہ لوگ اس سے مستفید ہو چکے ہیں۔

گوگل کے ساتھ معاہدے کے تحت غیرقانونی دھندے پرقابو پایا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: