قائم مقام گورنر اسٹیٹ بینک کو الیکشن کمیشن کو براہ راست فنڈز جاری کرنے کا حکم

اسلام آباد : سپریم کورٹ میں پنجاب عام انتخابات کے لیے فنڈز کی عدم ادائیگی پر اِن چیمبر سماعت کے موقع پر ججز نے فنڈ جاری نہ کرنے پر اظہارِ برہمی کرتے ہوئے واضح کردیا کہ عدالتی حکم پر عمل کرنا پڑے گا۔

چیف جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ اِن چیمبر سماعت کر رہا ہے جس میں جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس منیب اختر بھی شامل ہیں۔

ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بینک سیما کامل، اسپیشل سیکریٹری خزانہ اور ایڈیشنل سیکریٹری خزانہ 3 رکنی بینچ کے سامنے پیش ہوگئے۔

اٹارنی جنرل، سیکریٹری الیکشن کمیشن، وزارتِ خزانہ اور اسٹیٹ بینک کے حکام بھی چیمبر میں پیش ہوگئے۔

اس موقع پر اٹارنی جنرل نے کہا کہ وفاقی حکومت فنڈز کے اجرا کے معاملے میں بے بس ہے، پارلیمنٹ نے حکومت کو فنڈز جاری کرنے کا اختیار ہی نہیں دیا۔ذرائع کے مطابق قائم مقام گورنر اسٹیٹ بینک کے ہمراہ آنے والے دیگر افسران کو سماعت کے وقت باہر بھیج دیا گیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارتِ خزانہ کے اسپیشل اور ایڈیشنل سیکریٹری کے علاوہ دیگر حکام کو بھی سماعت کے وقت باہر بھیجا گیا جبکہ اٹارنی جنرل، سیکریٹری اور ڈی جی لاء الیکشن کمیشن سماعت میں موجود رہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: