پوپ فرانسس نے اپنی غلطی کا اعتراف کرلیا

نئی دہلی: دنیا بھر کے کیتھولک عیسائیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے  بچپن میں کلاس میں ساتھ پڑھنے والے ایک لڑکے کو زیادہ وزن ہونے تنگ کرن اعتراف کیا ہے۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق 86 سالہ پوپ فرانسس نے حال ہی میں بھارتی، پاکستانی اور نیپالی مسیحی طلبا کے ساتھ ایک ویڈیو کانفرنس میں بتایا کہ اس نوجوان لڑکے کا وزن زیادہ تھا اور میری حرکت پر بعد میں میرے والد نے لڑکے سے معافی مانگنے پر مجبور کیا۔

پوپ فرانسس نے جسمانی خدوخال اور خوبصورتی کے معیارات سمیت مسائل پر بھی گفتگو کی۔

پوپ فرانسس نے گفتگو کے دوران بھارت سے تعلق رکھنے والی مرلن نامی نوجوان خاتون نے اپنے وزن کی وجہ سے تنقید اور مذاق کا نشانہ بننے کا اپنا ذاتی تجربہ شیئر کیا۔بھارتی خاتون نے بتایا کہ کس طرح اس نے مسلسل طعنوں کو برداشت کیا جس کی وجہ سے وہ روئی اور اسے تکلیف بھی ہوئی۔

پوپ فرانسس نے اس حوالے سے کھل کر بات کی، انہوں نے جسمانی خدوخال اور خوبصورتی کے معیارات سمیت مسائل پر بھی گفتگو کی۔

سماجی ترقی سے ہی معاشی ترقی ممکن ہے ، منیر اکرم

علاوہ ازیں اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے جنرل اسمبلی میں سماجی ترقی کی عمومی بحث کے دوران اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا سماجی ترقی سے ہی معاشی ترقی ہو سکتی ہے ۔دنیا غیر مساوی تقسیم سے غیر محفوظ اور خطرے سے دوچار ہے۔ ایک ارب لوگ یعنی 8 میں سے ایک غریب ہے۔ تقریباً 350 ملین افراد بھوکے ہیں۔ موسمیاتی تبدیلیوں اور بڑھتے ہوئے تنازعات نے پاکستان جیسے ترقی پذیر ممالک کو درپیش خوراک، ایندھن اور مالیاتی چیلنجز کو مزید بڑھا دیا ہے ۔ دنیا کو کارپوریٹ لالچ، قوم پرستی، دائیں بازو کے انتہا پسندوں اور عالمی اشرافیہ کی قوتوں سے بڑا چیلنج ہے۔ ایسی اصلاحات کے بغیر حقیقی سماجی ترقی کا ادراک مشکل ہو گا۔ پاکستان اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے ایس ڈی جی محرک پیکج کی بھی مکمل توثیق کرتا ہے جو ترقی پذیر ممالک کو معاشی اور مالی بدحالی سے بچانے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: