بھارت: میٹل ڈی ٹیکٹر سے تلاشی کے بعد بھینس کا آپریشن

نئی دہلی : بھارت میں لاکٹ (منگل سوتر )گم ہوجانے پر بھینس کے پیٹ کی میٹل ڈی ٹیکٹر سے تلاشی لی گئی اورپھر اس کے پیٹ کا آپریشن بھی کردیا گیا ۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست مہاراشٹر میں خاتون نے اپنا منگل سوتر (شادی کے موقع پر پہنائے جانے والا لاکٹ) نہانے سے پہلے برتن میں رکھا، بعدازاں وہ گھر کے کام کاج میں مصروف ہو گئی۔خاتون کو کچھ دیر بعد خیال آیا تو اسے اپنا لاکٹ نہیں ملا جس کے بعد اسے شک ہوا کہ لاکٹ بھینس کھا گئی ہے۔

جس کے بعد اس نے اپنے شوہر کو بلایا، جانوروں کے ڈاکٹر کو بلا کر میٹل ڈی ٹیکٹر سے بھینس کے پیٹ کی تلاشی لی گئی۔

کافی تلاشی کے بعد پتہ چلا کہ واقعی بھینس نے لاکٹ کھا لیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اگلے ہی دن بھینس کا 2 گھنٹے طویل آپریشن کر کے لاکٹ کو نکال لیا گیا، آپریشن کے نتیجے میں بھینس کو 60 سے 65 ٹانکے لگے۔مقامی اہلکار نے بھارتی میڈیا کو بتایا کہ میٹل ڈی ٹیکٹر سے پتہ چلا تھا کہ پیٹ میں کوئی دھاتی شے ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق لاکٹ کی مالیت ڈیڑھ لاکھ (بھارتی ) روپے بتائی گئی ہے۔

لندن سے موصول ہونے والی ایک خبر کے مطابق گرمی کی تلاش میں5 فٹ لمبا اژدھا رہائشی علاقہ کے گھر میں کچن میں پہنچ گیا ۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق لندن کا ایک خاندان اس وقت دنگ رہ گیا جب اس نے اپنے کچن میں 5 فٹ لمبے اژدھے کو آرام کرتا دیکھا۔رائل سوسائٹی فار دی پریوینشن آف کرولٹی ٹو اینیملز (RSPCA)کے مطابق مذکوہ افراد کے یہاں کام کرنے والی ملازمہ نے جیسے ہی اژدھے کو دیکھا تو انہیں کال کر کے مطلع کیا۔ محکمہ جنگلی حیات نے مذکورہ اژدھے کو جنوبی ایسیکس وائلڈ لائفہسپتال میں علاج کے لیے داخل کر دیا ہے۔ریسکیو ذرائع کے مطابق اژدھے زہریلے نہیں ہوتے لیکن یہ اپنے شکار کے گرد گھیرا تنگ کر کے، انہیں زندہ نگل کر ان کی جان لے سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: