کراچی نے اپنا فیصلہ سنا دیا،خالد مقبول کا اورنگی جلسے سے خطاب

کراچی :متحدہ قومی موومنٹ پاکستان اورنگی ٹاؤن کے زیر اہتمام گلشن بہار جرمن گراؤنڈ میں جلسہ عام کا انعقاد کیا گیا۔ جلسہ عام میں کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی،سینئر ڈپٹی کنوینر ز،سید مصطفی کمال،ڈاکٹر فاروق ستار،نسرین جلیل،ڈپٹی کنوینر انیس احمد قائم خانی، خواجہ اظہار الحسن، عبدالوسیم و اراکین رابطہ کمیٹی،حق پرست سینیٹر ز سید فیصل سبزواری اور خالدہ اطیب نے شرکت کی۔

جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ کراچی کے عوام نے اپنا فیصلہ سنا دیا، ہجرت پر اگر کوئی کتاب لکھی جائے تو اورنگی کی دہری ہجرت کے ذکر کے بغیر مکمل نہیں ہوگی۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ اورنگی ٹاؤن دنیا کی سب سے بڑی کچی آبادی ہے اور یہ ہی اورنگی ٹاؤن آپ کو پاکستان کا راستہ دکھا ئے گا اور اگر یہاں درست مردم شماری ہو تو اورنگی ٹاؤن 30لاکھ سے زائد نفوس پر مشتمل ہے جو تیسرا بڑا شہر ہوگا ۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ پہلے ہندستان چھوڑا اس کے بعد بنگلہ دیش چھوڑا کیونکہ انکا عزم تھا کہ جہاں پاکستان ہوگا وہاں ہم ہونگے اور جو مشرقی پاکستان میں رہ گئے آج بھی وہ پاکستان کے ساتھ ہیں۔

خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ اورنگی ٹاؤن وہ شہر ہے جس نے ہمیں سکھایا کہ ظالموں کی آنکھ میں آنکھ ڈال کے کیسے بات کرنی ہے اگر آپ کو پاکستان کی قدر و قیمت معلوم کرنی ہو تو اورنگی سے پوچھیں اور یہ دوہری ہجرت کرنے والوں نے اس ملک کیلئے لاکھوں جانوں کا نظرانہ دیا۔اس موقع پر سینئر ڈپٹی کنوینر سید مصطفیٰ کمال نے کہا کہ اورنگی ٹاؤن کے عوام آپ نے سب سے بڑا اجتماع کر کے ثابت کردیا کے آنے والا وقت ایم کیو ایم اورکراچی کا ہے۔سینئر ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ کوئی موبائل فون پاور بینک کے بغیر نہیں چل سکتا اس ہی طرح پاکستان بھی کراچی کے بغیر نہیں چل سکتا اور کراچی کا پاور بینک ایم کیو ایم ہے آج کا جلسہ صرف اورنگی ٹاؤن کا جلسہ ہے آج کے جلسے سے یہ نمونہ ریکارڈ ہو گیا ہے کہ اس ریکارڈ کو کوئی توڑ نہیں سکتا ۔سینئر ڈپٹی کنوینر نسرین جلیل نے کہا ک آج کا جلسہ بتا رہا ہے آپ کی وابستگی ایم کیو ایم سے نظر آرہی ہے آپ جس حالت میں رہے آپ تعریف کے قابل ہیں اور جنہوں نے شہر کو اس حالت پر پہنچایا ہے وہ گالی کے مستحق ہیں ایم کیو ایم نے ماس ٹرانزٹ منصوبے کا ایک مسودہ وفاقی حکومت کو پیش کیا تھا لیکن وفاق نے اس کی گارنٹی نہیں دی۔ انیس احمد قائم خانی نے ایم کیو ایم کے ترانے پر عوام کو پرچم لہرانے پر آمادہ کیا اور صحافیوں کو اس کا مشائدہ کروایا۔اس موقع پر رکن رابطہ کمیٹی و سابق وفاقی وزیر سید امین الحق نے کہا کہ آج کا جلسہ اس بات کی غمازی کر رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: