کورین حکومت کا بے روزگار پاکستانیوں‌ کو نوکریاں‌ دینے کا اعلان

تنخواہ ایک سے دو لاکھ روپے

عمر کی حد 18 سے 39 سال، تعلیم کی قید نہیں

درخواست جمع کرانے کی آخری تاریخ، 3 مارچ

اوورسیز ایمپلائمنٹ کارپوریشن آف پاکستان اور جنوبی کوریا کی حکومت کے درمیان ایک معاہدے کے تحت جنوبی کوریا میں ملازمت کے خواہش مند افراد سے درخواستوں کی وصولی کا عمل 27 فروری سے جاری ہے، آخری تاریخ 3 مارچ 2017 ہے۔

اس سارے عمل کے چیدہ چیدہ نکات درج ذیل ہیں ۔

1۔ یہ ایمپلائمنٹ سکیم پاکستان و جنوبی کوریا کی حکومت کے درمیان ایک معاہدے کا حصہ اور مکمل طور پر قانونی ہے۔

2۔ اس سکیم کے تحت امیدوار https://www.oec.gov.pk پہ آن لائن درخواست جمع کروا سکتے ہیں ۔

3۔ پہلے مرحلے میں کورین زبان کے ٹیسٹ کے لیے امیدواروں کا انتخاب بذریعہ قرعہ اندازی کیا جائے گا۔

4۔ قرعہ اندازی میں شامل ہونے کی فیس صرف 1 ہزار روپے ہے۔ آن لائن درخواست دیتے وقت ادا شدہ چالان فارم کی سکین شدہ تصویر اپ لوڈ کرنا ہوگی۔ یہ چالان فارم ویب سائٹ پہ دستیاب ہے اور حبیب بینک لیمیٹڈ HBL کی ملک بھر میں موجود شاخوں پہ جمع کروایا جا سکتا ہے۔

5۔ قرعہ اندازی میں منتخب ہونے والے افراد کو کورین زبان کے ٹیسٹ کے لیے رجسٹریشن کرانا ہوگی جس کی فیس 24 ڈالر یعنی تقریبا 2500 روپے ہے۔

6۔ کورین زبان کی تیاری کے لیے اوورسیز ایمپلائمنٹ کارپوریشن آف پاکستان باقاعدہ کلاسسز کا اجراء کرے گی جن کی مدت تقریبا 2 ماہ ہوگی۔ کلاسز لاہور، اسلام آباد، کراچی، پشاور اور کوئٹہ میں ہوگا۔ البتہ امیدوار چاہیں تو بڑے شہروں یا اپنے شہروں میں اچھی شہرت کی حامل اکیڈمیز سے بھی تیاری کر سکتے ہیں۔

7۔ ٹیسٹ میں کامیاب ہونے والے امیدواروں کی ٹیسٹ میں حاصل کردہ نمبروں کے حساب سے میرٹ لسٹ بنے گی۔

8۔ جنوبی کوریا کی کمپنیاں اپنی ضرورت کے مطابق میرٹ لسٹ سے امیدواروں کا انتخاب کریں گی۔ ویزا کمپنی بھیجے گی، ٹکٹ اخراجات خود برداشت کرنا ہوں گے۔

9۔ واضح رہے کہ ان ملازمتوں کے لیے کسی خاص تعلیم کی ضرورت نہیں۔ یہ لیبر جابز ہیں، یعنی کہ محنت مزدوری والی نوکریاں۔

10۔ جس طرح پاکستان میں فیکٹریوں میں لوگ کام کرتے ہیں اسی طرح جنوبی کوریا کی مختلف پیدواری کمپنیاں جیسا کہ بجلی کی اشیاء بنانے والی، کھلونے بنانے والی، آٹو انڈسٹریز، جہاز رانی کی صنعت، کیمکل اور پلاسٹک انڈسٹری وغیرہ اپنے ہاں پاکستانی ورکرز کو کام کرنے کا موقع فراہم کر رہی ہیں۔

چند ضروری باتیں!

قرعہ اندازی میں شامل ہونا بہت آسان ہے جس کے لیے آن لائن رجسٹریشن کا آسان ترین طریقہ فراہم کیا گیا ہے، اس لیے دیر نہ کیجیے، سب سے پہلے تو قرعہ اندازی میں شامل ہونے کے لیے 3 مارچ سے پہلے پہلے آن لائن یا ادارے کی دفتر میں جا کے اپلائی کر دیں۔ ساتھ ہی ارجنٹ پاسپورٹ کے لیے اپلائی کر دیں، کیونکہ قرعہ اندازی میں نام آنے کے بعد ٹیسٹ کی رجسٹریشن کے لیے فارم کے ساتھ پاسپورٹ کی کاپی منسلک کرنا ضروری ہوگا۔ رجسٹریشن کا دورانیہ 13 سے 17 مارچ ہے، یعنی 13 مارچ سے پہلے پہلے آپ کے پاس پاسپورٹ ہونا ضروری ہے تاکہ بروقت رجسٹریشن ہو سکے۔

تنخواہ !

راقم کے 5 ذاتی دوست اور کئی دیگر جاننے والے اس سکیم کے تحت جنوبی کوریا جا چکے ہیں، ان کی فراہم کردہ معلومات کے مطابق کم از کم تنخواہ 1000 ڈالر یعنی ایک لاکھ روپے پاکستانی ہے۔ اوسط تنخواہ ڈیڑھ لاکھ، اچھی کمپنی میں یہ دو لاکھ تک بھی پہنچ جاتی ہے۔ 8 گھنٹے ڈیوٹی کے بعد 4 گھنٹے کا اوور ٹائم بھی اکثر و بیشتر لگ جاتا ہے۔

رہائش اور کھانا!

کمپنی بہترین رہائش فراہم کرتی ہے۔ گرمیوں میں اے سی اور سردیوں میں ہیٹر وغیرہ کا انتظام ہوتا ہے۔ فل فرنیشڈ رہائش مہیا کی جاتی ہے۔ پاکستانی افراد مل جل کے رہتے ہیں اور کھانا خود ہی بناتے ہیں، کیونکہ جنوبی کوریا میں حلال کھانا عام طور پہ دستیاب نہیں ہوتا۔ بڑے سٹورز اور ہر ہفتہ محلہ میں آنیوالی وین سے لوگ سبزیاں و پھل اور دالیں وغیرہ خرید سکتے ہیں۔

تو صاحبو جلدی کیجیے۔ قسمت آزمائیے۔ ایک روشن مستقبل آپ کا منتظر ہے۔ خود اپلائی کیجیے اور اپنے دوستوں و ضرورت مند افراد کو بتائیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: