پیپلزپارٹی کے گرد نیب کا شکنجا, کراچی کے انتہائی اہم مقام پر چھاپہ

نیب اہلکاروں کا ڈی ایم سی ملیر کے دفتر پر چھاپہ ، اہلکاروں کے آتے ہی افسران و ملازمین میں بھگدڑ ، متعدد افسر و ملازمین دفاتر چھوڑ کر چلے گئے ، نیب اہلکاروں نے اکاؤنٹس آفس کا رکارڈ چیک کرنے کے بعد کیش بک و دیگر کاغذات قبضے میں لیکر دو افسران کو ابتدائی تفتیش کیلئے ساتھ لے گئے.

تفصیلات کے مطابق نیب اہلکاروں نے فاسر اسامہ کی قیادت میں پیر کے روز ڈی ایم سی ملیر کے مرکزی دفتر پر چھاپہ مار کر اکاونٹس کا تمام رکارڈ تحویل مین لے لے لیا اور ابتدائی تفتیش کے لیئے دہ افسران اسسٹنٹ اکاؤنٹ آفیسر سہیل مغل ا ور ڈائریکٹر ایڈمن نصراللہ سرکی کو ساتھ لے گئے اس سے قبل اہلکاروں کے آتے ہی ڈہی ایم سی ملیر کے افسران و ملازمین میں بھگدڑ مچ گئی اور متعدد افسر و ملازمین دفاتر چھوڑ کر چلے گئے.

نیب اہلکاروں نے اکاؤنٹس آفس کا رکارڈ چیک کرنے کے بعد کیش بک و دیگر کاغذات قبضے میں لیکر دو افسران کو ابتدائی تفتیش کیلئے ساتھ لے گئے اس سلسلے میں معلوم ہوا ہے کی چیئرمین جان محمد بلوچ اور وائیس چیئرمین خالق مروت کئی روز سے اختلافات چلے رھے تھے ملازمین نے نیب چھاپے کو اس ناراضگی کا شاخسانہ قرار دیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: