کورنگی میں کے الیکٹرک کی بدمعاشیاں عروج پر،عوام سراپا احتجاج

کراچی (ایچ آراین ڈبلیو) K الیکٹرک کی بدمعاشیاں عروج پر 80 فیصد سے زائد بل کلیئر ہونے کے باوجود کورنگی سوکوارٹر 50/C بجلی سے محروم K الیکٹرک کورنگی کے جنرل مینیجر کے عوام کو ہدایت چوری کرو یا ڈاکہ ڈالو پہلے بل کلیئر کرو بعد میں بجلی کی بات کرو۔

ہر نئے میٹر کے مد 5000 روپے مٹھائی کے لیئے جاتے ہیں اہل علاقہ سراپا احتجاج جنرل مینیجر کو برطرف کرنے اور وزیراعظم اور اعلیٰ حکام سے K الیکٹرک کی ناجائز زیادتی کے خلاف سختی سے نوٹس لینے کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق کورنگی کے علاقے سو کوارٹر میں گزشتہ چار دنوں سے بجلی نہ ہونے کی وجہ سے اہلِ علاقہ نے K الیکٹرک کے دفتر پر شکایات کے انبار لگا دیئے۔

کورنگی K الیکٹرک کے جنرل مینیجر نے شکایت کے لیئے آئے عوام کو ہدایت کہ پہلے پرانے واجبات ادا کرو چاہے اس کے لیئے چوری کرو یا ڈکیتی مارو پہلے بل کلیئر کرو اس کے بعد بجلی کی بات کرو جنرل مینیجر کی نازیبا ہدایت کے بعد کورنگی سو کوارٹر میں موجود سماجی شخصیت اڑان ہیومن رائٹس کے چیئرمین عبدالمجید طاہر نے روزنامہ ڈیلی اسپیشل کے نمائندے سے رابطہ کیا اور کورنگی سوکوارٹر میں ہونے والے K الیکٹرک کی زیادتی اور بھتہ خوری سے آگاہ کیا اور پریشان عوام کو مدد فراہم کرنے کی گزارش کی ہے۔

سماجی شخصیت عبدالمجید طاہر نے نمائندہ ڈیلی اسپیشل کو بتایا کہ اس علاقے میں لگنے والے ہر نئے میٹر کی مد میں 5000 روپے بھتہ وصول کیا جاتا ہے اور کسی بھی قسم کی شکایت پر بغیر پیسوں کے کوئی کام نہیں کیا جاتا جنرل مینیجر کورنگی K الیکٹرک نے اس علاقے سے پرانے واجبات کی ادائیگی بھی شکایت کے لیئے آنے والوں کے متھے ماردیا ہے احتجاج کے دوران عوام نے K الیکٹرک کے خلاف نعرے بازی کی اور روزنامہ ڈیلی اسپیشل کے ذریعے وزیراعظم پاکستان میاں محمد نوازشریف وفاقی وزیر پانی و بجلی اور وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ سے K الیکٹرک کی بدمعاشی اور غریب عوام کو ناجائز تنگ کرنے کا فوری طور پر سختی نوٹس لیتے ہوئے جنرل مینیجر کو برطرف کرنے اور کورنگی سوکوارٹر 50/C کی بجلی فوری بحال کرنے کی اپیل کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں:

اپنا تبصرہ بھیجیں