صوبائی اور بلدیاتی حکومت کراچی میں‌ مکمل ناکام ہوگئی، سپریم کورٹ

کراچی: سپریم کورٹ آف پاکستان نے سندھ حکومت کی کارکردگی کو ناقص قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ صوبائی اور شہری حکومت مکمل طور پر ناکام ہوگئی، بارشوں میں کرنٹ لگنے سے 22 لوگ مر گئے مگر کے الیکٹرک کو کوئی پوچھنے والا نہیں ہے۔

دورانِ سماعت جسٹس گلزار نے ریمارکس دیے کہ بارشوں سے کراچی ڈوب رہا تھا اور حکومتی شخصیات کیفے پیالہ پر بیٹھی چائے نوش فرما رہی تھیں، لوگوں کی ضد اور انا سے کراچی کے بچے اور شہری مررہے ہیں۔

جسٹس گلزار نے ریمارکس دیے کہ چند ٹکوں کی خاطر سندھ اور شہری حکومت نے سارے شہر کو فروخت کرڈالا، وزیراعلیٰ کو توہین عدالت نوٹس جاری کردیے جائیں گے اگر انہوں نے 9 اگست تک مطمئن نہیں کیا، آپ لوگوں نے بچوں سے سب کچھ چھین لیا، معلوم نہیں چڑیا گھر میں جانور بھی ہیں یا نہیں، کراچی طم نچے والوں کے ہاتھوں میں دے دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: