چئیرمین ایف بی آر شبر زیدی کا استعفیٰ، پہلے خبر پھر تردید

کراچی: فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے چیئرمین شبر زیدی نے عمران خان کا ساتھ چھوڑتے ہوئے سرکاری عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

رپورٹس کے مطابق شبر زیدی کی طبیعت ناساز ہے جس کی وجہ سے وہ گزشتہ تین ماہ سے رخصت پر ہیں، ڈاکٹرز نے انہیں مستقل آرام کا مشورہ دیا جس کے بعد انہوں نے گزشتہ روز وزیراعظم اور متعلقہ حکام کو اپنا استعفیٰ ارسال کرتے ہوئے مشورہ دیا کہ ایف بی آر کے لیے نیا نام تلاش کرلیں۔

شبر زیدی نے اپنے فیصلے سے متعلق اعلیٰ حکام کو آگاہ کر دیا۔اس حوالے سے شبر زیدی کا کہنا ہے کہ میں بیمار ہوں مزید کام جاری نہیں رکھ سکتا،ڈاکٹرز نے مجھے آرام کا مشورہ دیا ہے۔شبر زیدی نے مزید کہا کہ میری وزیراعظم سے بھی بات ہو گئی ہےانہیں بتایا ہے کہ عہدے کا چارج مزید نہیں سنبھال سکوں گا۔

شبر زیدی کے غیر متحرک ہونے کی وجوہات:

ذرائع کے مطابق شبر زیدی نے شوگر مافیا اور سگریٹ کا کام کرنے والی کمپنیوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے کام شروع کردیا تھا اور یہی وجہ اُن کے جبری رخصت پر جانے کی وجہ بھی بنی، حکومتی اراکین بھی اس بات کی تصدیق کررہے ہیں کہ انہوں نے طاقتور ترین مافیا کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کری تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: