کرونا وائرس:‌ ایران سے اآنے والے 110 زائرین کا تاحال سراغ نہ لگ سکا

کراچی: وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت کروناوائرس پر ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، جس میں وزیرصحت، وزیربلدیات، مشیرقانون اور چیف سیکریٹری نے شرکت کی۔ دوران گفتگو یہ انکشاف سامنے آیا کہ ایران سے آنے والے 110 زائرین ایسے ہیں جن کا کوئی معلوم نہیں ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں کورکمانڈر کراچی اور رینجرز کے اعلیٰ حکام سمیت آئی جی سندھ، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکریٹری اور سیکریٹری داخلہ بھی شریک ہوئے۔ اجلاس میں سیکریٹری صحت، کمشنرکراچی، ایڈیشنل آئی جی، ڈی جی پی ڈی ایم اے، ایئرپورٹ، سی اےاے، ایف آئی اے اور آغاخان اسپتال کے ڈاکٹر فیصل نے بھی شرکت کی۔

اس موقع پر کروناوائرس سے متعلق فریفنگ دی گئی اور حکام کو بتایا گیا کہ ایران سے کل زائرین 2355 ہیں جن میں سے گزشتہ 14دن میں 1748واپس آئے جن میں سے 497 زائرین کو ان کےگھروں میں قرنطینہ میں رکھا گیا ہے جب کہ 2245 مکمل ٹریس ہوئے اور 110 ایسے ہیں جن کا تاحال کوئی سراغ نہ مل سکا۔

رپورٹ کے مطابق ٹریس نہ ہونے والوں میں 109 کا تعلق کراچی اور ایک کابدین سے ہے۔ اجلاس میں وزیراعلی سندھ کا کہنا تھا کہ آج کروناوائرس کا ایک مشتبہ ٹیسٹ کرایا وہ منفی آیا، وائرس کے 2 ٹیسٹ بھجوائے ان کے نتائج آنےباقی ہیں، معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا سے بات کی ہے، ڈاکٹرظفرمرزا نے ہر طرح کا تعاون کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

بریفنگ کے دوران مزید بتایا گیا کہ سندھ میں کروناوائرس کے 68 ٹیسٹ کئے گئے، پنجاب میں 75، اسلام آباد میں59، کے پی میں 24ٹیسٹ کئےگئے۔ بلوچستان میں 8، آزادکشمیر میں 3، گلگت بلتستان میں 14ٹیسٹ ہوئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: