پنجاب، پسند کی شادی پر سرعام بربریت، 20 سالہ نوجوان کے بازو اور ٹانگیں‌ کاٹ‌ دیں

گوجرہ پسند کی شادی کرنا نوجوان کا جرم بن گیا اور لڑکی کے بااثر رشتے داروں نے گوجر منواحی گاؤں 179 گ ب میں نوجوان کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا کر کلہاڑیوں کے وار سے اُس کی ٹانگیں اور ہاتھ کاٹ دیے۔

ذرائع نیوز کو ملنے والی اطلاعات کے مطابق نعمان شاہد لڑکے نے 20 روز قبل 211 گ ب کی ثنا نامی لڑکی سے شادی کی، لڑکی کے پھوپھی زاد بھائیوں رضوان اور شاہد نے لڑکے کے بازو اور ٹانگیں کاٹ دیں اور سرعام تشدد کا نشانہ بنایا۔

نوجوان پر تشدد کی ویڈیو ذرائع نیوز نے حاصل کرلی جس میں دو ملزمان کو لڑکے پر تشدد اور اُس کے بازو و ٹانگیں کاٹتے دیکھا جاسکتا ہے۔ ویڈیو میں ملزمان کی بربریت اور دو سالہ نوجوان کی آہ و بکاں واضح طور پر سنی جاسکتی ہے۔

متاثرہ نوجوان کو اسپتال پہنچایا جسے تشویشناک حالت میں الائیڈ اسپتال بھیج دیا گیا، متاثرہ نوجوان کو اسپتال وینٹی لیٹر پر رکھا گیا۔ رپورٹ کے مطابق ملزمان موقع سے باآسانی فرار ہوگئے۔ اہل خانہ نے وزیراعلیٰ پنجاب اور دیگر اداروں سے اپیل کی کہ وہ بااثر ملزمان کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: