گھوٹکی: 16 سالہ لڑکی کا ‘اغوا اور گینگ ریپ’

گھوٹکی: صوبہ سندھ کے ضلع گھوٹکی میں ایک 16 سالہ لڑکی کو مبینہ طور پر اغواء کے بعد نشہ آور ادویات دے کر 5 افراد نے گینگ ریپ کا نشانہ بنایا۔

متاثرہ لڑکی کے بھائی لیاقت کھمبرو نے صحافیوں سے گفتگو میں الزام عائد کیا کہ ان کی بہن کو 5 افراد نے اغواء کیا اور ان کے گاؤں کھمبرا سے دور ایک گھر میں لے جاکر نشہ آور ادویات دے کر گینگ ریپ کا نشانہ بنایا۔

انھوں نے یہ دعویٰ بھی کیا کہ ریپ کے بعد ملزمان ان کی بہن کو بے ہوشی کی حالت میں ان کے گھر کے باہر چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

پولیس کے مطابق لڑکی کو اوباڑو تعلقہ ہسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ابتدائی طبی رپورٹ میں ریپ کی تصدیق کی گئی۔

دوسری جانب واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے اسٹیشن ہاؤس آفیسر کھمبرا دریا خان نے ڈان کو بتایا کہ کچھ ملزمان کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔

علاوہ ازیں سندھ کے وزیر داخلہ سہیل انور سیال اور انسپکٹر جنرل سندھ اے ڈی خواجہ نے واقعے کا نوٹس لے لیا۔

آئی جی سندھ نے گھوٹکی کے سینیئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) مقصود بنگش کو ہدایات دیں کہ متاثرہ لڑکی اور ان کے اہلخانہ کو مکمل تحفظ فراہم کیا جائے اور اس کیس میں انصاف کو یقینی بنایا جائے۔

بشکریہ ڈان

اپنا تبصرہ بھیجیں: