سرفراز کو کپتانی سے ہٹانے کی سازش، لابی میں‌ کون کون شامل ہے؟ ویڈیو دیکھیں

بھارت کے ہاتھوں شکست کے بعد سرفراز مخالف لابی اور سرگرم ہوگئی انہوں نے کھل کر وکٹ کیپر سے کپتانی واپس لینے کا مطالبہ کردیا، یہ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں کہ ایک مخصوص لابی تھی جو پیچھے بیٹھ کر کام کررہی تھی البتہ اب یہ پوائزن ایک کینسر کی مانند سامنے آگیا۔

سرفراز کے سب سے بڑے مخالف شعیب ملک ہیں جو اپنا آخری ورلڈکپ کھیل رہے ہیں، کپتان کے بارے میں یہ بات بھی مشہور ہے کہ وہ اپنی ایمانداری کی وجہ سے کسی کھلاڑی کو بے ایمانی یا سٹے بازی کرنے نہیں دیتے اسی باعث انہیں تعصب کا نشانہ بھی بنایا جارہا ہے۔

انگلینڈ کی ایک فیملی سے تعلق رکھنے والے عماد وسیم کپتانی حاصل کرنے کے لیے سرگرم ہیں یہی وجہ ہے کہ کارکردگی نہ ہونے کے باعث انہیں سلیکٹ کرلیا جاتا ہے، جبکہ عماد کو شعیب اختر، عاقب جاوید، وسیم اکرم، رمیز راجہ گویا پنجاب سے تعلق رکھنے والے ہر کھلاڑی کی سپورٹ حاصل ہے۔

ایک مختصر ویڈیو میں آپ کو سمب سمجھ آجائے گا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان معین خان نے کہا ہے کہ اگر ٹیم کے موجودہ کپتان سرفراز احمد کو ٹیم میں ہونے والی گروپ بندی کا علم تھا لیکن وہ پھر بھی اسے ختم نہ کرواسکے تو اس کا مطلب ہے کہ وہ کپتانی کے اہل نہیں ہیں۔

کراچی میں ایک تقریب کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے معین خان نے ٹیم میں گروپ بندی، قومی ٹیم کی ورلڈکپ میں کارکردگی اور ٹیم کی ایونٹ میں واپسی کی بات کی۔

واضح رہے کہ ذرائع ابلاغ کی رپورٹس کے مطابق بھارت کے خلاف شکست کے بعد سرفراز احمد نے ڈریسنگ روم میں بغیر کسی کھلاڑی کا نام لیے بغیر کہا تھا کہ اگر ان کے ساتھ کچھ برا ہوا تو ان کے ساتھ مزید لوگ بھی گھر جائیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: