منی لانڈرنگ کیس، اسکاٹ لینڈ یارڈ نے ضبط رقم واپسی کا سلسلہ شروع کردیا

لندن: اسکاٹ لینڈ یارڈ نے منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات کے دوران ضبط کی جانے والی رقم کی واپسی کا سلسلہ شروع کرتے ہوئے مذکورہ رقم سرفراز مرچنٹ کے حوالے کردی۔

جیو نیوز کے مطابق سرفراز مرچنٹ کو دہشت گردی کی مالی معاونت کرنے والے ادارے کے ہیڈ کوارٹر  بلا کر ضبط شدہ رقم اُن کے حوالے کی گئی۔

اسکاٹ لینڈ یارڈ نے عدم ثبوتوں اور شواہد کی بناء پر منی لانڈرنگ کیس گزشتہ برس بند کرنے کا اعلان کیا تھا تاہم اب ضبط شدہ رقم واپس دینے کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔

عمران فاروق قتل کی تحقیقات کے دوران اسکاٹ لینڈ یارڈ کی ٹیم کو ہزاروں پاؤنڈز ملے تھے جنہیں تحقیقاتی ادارے نے اپنے قبضے میں لے کر منی لانڈرنگ کیس کی تفتیش کا آغاز کردیا تھا۔

منی لانڈرنگ کیس میں بانی ایم کیو ایم کو گرفتار جبکہ طارق میر ، سرفراز مرچنٹ، ایم انور سمیت دیگر رہنماؤں سے تفتیش کی تھی اور رقم کے حصول کا طریقہ بھی جانا تھا۔

Police return cash of Sarfraz Merchant

اسی دوران ٹیلی ویژن پر یہ خبر بھی نشر کی گئی کہ ایم انور اور طارق میر نے اسکاٹ لینڈ یارڈ کے سامنے بھارت کی خفیہ ایجنسی را سے فنڈ لینے کا اعتراف کیا ہے تاہم کچھ عرصے بعد یہ خبریں دم توڑ گئیں۔

منی لانڈرنگ کیس میں بانی ایم کیو ایم کا پاسپورٹ ضبط کیا گیا تھا اور اُن کے ملک چھوڑنے پر پابندی بھی عائد کی گئی تھی تاہم گزشتہ برس تحقیقاتی اداروں نے بانی ایم کیو ایم کے خلاف مقدمے کی تحقیقات بند کر کے انہیں بے قصور قرار دیا تھا۔

سرفراز مرچنٹ نے رقم ملنے کی تصدیق کردی ہے جبکہ ایم کیو ایم کے ترجمان کی جانب سے کوئی اعلامیہ جاری نہیں کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: