ایم کیو ایم کا ایک اور کارکن دوران حراست جاں بحق

کراچی: دو سال قبل قانون نافذ کرنے والے ادارے کے ہاتھوں گرفتار ہونے والا ایم کیو ایم لیاری کا کارکنان محمد حسین جان بلوچ سینٹرل جیل میں انتقال کرگیا۔

سینٹرل جیل انتظامیہ کے مطابق ایم کیو ایم کے کارکن کو دل کا دورہ پڑا جس کے بعد انہیں سول اسپتال منتقل کیا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہوسکا، ایم کیو ایم کے مطابق مقتول لیاری کی یوسی 16 کا کارکن تھا اور ڈھائی برس سے سینٹرل جیل میں قید تھا۔

اہل خانہ کا کہنا ہے کہ حسین جان بلوچ کو کوئی بیماری لاحق نہیں تھی تاہم اُن پر دوران حراست بہت تشدد کیا گیا، مقتول کے 7 بچے ہیں اور وہ ایک نوکری پیشہ انسان تھے۔

ایم کیو ایم پاکستان و لندن کے رہنماؤں نے دوران حراست انتقال پر شدید الفاظ میں مذمت کی، سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر فیصل سبزواری نے کہا کہ 23 اگست کی پالیسی کے باوجود کچھ تبدیل نہیں ہوا اور ویسے ہی کارکنان ماورائے عدالت قتل کیے جارہے ہیں۔

ایم کیو ایم لندن کے کنونیئر ندیم نصرت نے اس قتل کو ماورائے عدالت قتل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس میں ملوث افراد کو سخت سزا دی جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: