ایم کیو ایم کے فاروق ستار گرفتاری سے بچ گئے

کراچی انسدادہشتگردی کی عدالت میں گزشتہ سال 22 اگست کو میڈیا ہاوسز پر حملہ جلاو گھیراو توڑ پھوڑ سے متعلق 5 مقدمات کی سماعت ہوئی ۔ایم کیو ایم کے رہنما عامر خان قمر منصور کنور نوید شاہد پاشا گلفراز خٹک 3 خواتین کارکنان سمیت دیگر ملزمان پیش ہوئے۔

تاہم ایم کیو ایم کے رہنما فاروق ستار پیش نہیں ہو سکے عدالت نے فاروق ستار اور عامر خان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری معطل کر دئے۔ عدالت میں ضلع ملیر پولیس کی جانب سے 22 اگست کے تین مقدمات ختم کرنے سے متعلق سی کلاس کی رپورٹ پیش کی گئی جس میں پولیس کی جانب سے بتایا گیا تینوں مقدمات عدم شواہد کی بناء پر ختم کر دئے گئے ہیں۔

ان مقدمات میں ڈاکٹر فاروق ستار عامر لیاقت خوش بخت شجاعت خالد مقبول اور دیگر مفرور تھے پولیس کے مطابق مقدمات میں ملوث ملزمان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں ملا ان مقدمات کی تحقیقات ایس ایس پی راو انوار نے کی ہے تاہم دستاویزات پر راو انوار کا نام اور دستخط نہ ہونے کے باعث پولیس کی پیش کردہ رپورٹ منظور نہ ہو سکی۔ عدالت نے اس کیس کی مزید سماعت 9 جون تک ملتوی کردی۔ عدالت کی جانب سے رینجرز کو 22 اگست کے مقدمات میں مفرورفاروق ستار اور عامر خان گرفتار کر کے اج عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔ گرفتاری سے بچنے کے لئے سندھ ہائیکورٹ سے ملزمان حفاظتی ضمانت حاصل کرچکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: