لاپتہ افراد کا معاملہ: نوازشریف نے پشتون لانگ مارچ کی حاموش حمایت کردی

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد اور سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ لاپتہ افراد کا معاملہ ایک بہت بڑا مسئلہ ہے اور کسی کو لاپتہ کردینا ایک بہت بڑا جرم ہے۔

وفاقی دارالحکومت کی احتساب عدالت کے باہر صحافیوں سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے لاپتہ افراد کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ان پر کیا گزرتی ہوگی جنہیں یہ بھی معلوم نہیں کہ ان کے پیارے زندہ ہیں یا نہیں، انہوں نے سوال کیا کہ کیا لاپتہ افراد کے والدین اور بچوں کی زندگی سکون سے گزرسکتی ہے؟

واضح رہے کہ مسلم لیگ (ن) کے ساڑھے 4 سالہ دور اقتدار میں نواز شریف کی جانب سے اس معاملے پر کبھی بات نہیں کی گئی جبکہ لاپتہ افراد کے اہل خانہ اور سول سوسائٹی کے افراد نے متعدد مرتبہ اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف حصوں میں احتجاج کیا اور یہ سلسلہ اب بھی جاری ہے، تاہم حکومت کی جانب سے اس معاملے پر کوئی رد عمل نہیں دکھایا گیا۔

اسے سلسلے میں 2 روز قبل بھی پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے رہنماؤں کی جانب سے لاپتہ افراد کی بازیابی کے لیے پشاور میں ایک جلسے کا انعقاد کیا گیا تھا، جہاں لاپتہ افراد کے اہل خانہ نے اپنے پیاروں کی تصاویر کے ساتھ شرکت کی تھی اور حکومت سے ان کی واپسی کا مطالبہ کیا تھا۔

یہ بھی یاد رہے کہ ملک بھر میں سیکڑوں افراد لاپتہ ہیں اور ان کی گمشدگی کی مختلف وجوہات سامنے آتی رہی ہیں جبکہ اس معاملے پر پاکستان کی اعلیٰ عدالتوں میں کئی درخواستیں زیر التوا ہیں۔

تاہم ان لاپتہ افراد کے اہل خانہ کو یہ تک نہیں معلوم کے ان کے پیارے زندہ ہیں یا نہیں اور وہ ہر پل اپنے بچوں، بیٹوں، بھائیوں کی واپسی کے منتظر نظر آتے ہیں۔

لاپتہ افراد کے علاوہ احتساب عدالت کے باہر بات چیت کے دوران جنوبی پنجاب کے معاملے پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کی قیادت میں جنوبی پنجاب کی ترقی قابل ستائش ہے۔

انہوں نے کہا کہ کل کچھ لوگوں کے دلوں میں جنوبی پنجاب صوبے کی محبت جاگ اٹھی اور پارٹی چھوڑنے والے یہ وہی لوگ تھے، جنہوں نے مجھے پارٹی صدارت کے لیے ووٹ نہیں دیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب کے لوگ مسلم لیگ (ن) سے اتنے ہی مطمئن ہیں جتنے وسطی اور بالائی پنجاب کے ہیں اور جنوبی پنجاب میں (ن) لیگ کی مقبولیت کا حالیہ مظہر لودھراں کا الیکشن ہے۔

بشکریہ ڈان نیوز


خبر کو عام عوام تک پہنچانے میں ہمارا ساتھ دیں، صارفین کے کمنٹس سے ادارے کا کوئی تعلق نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: