سرفراز احمد کو ہراساں کرنے والے نوجوان کو لینے کے دینے پڑ گئے

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد گزشتہ روز اپنے بیٹے کے ہمراہ  ایک مال میں تھے کہ اسی دوران انہیں ایک پاکستانی شہری نے ہراساں کیا اور ویڈیو بناتے ہوئے غلط الفاظ استعمال کیے۔

ہراساں کرنے والے پاکستانی شہری کی شناخت نعمان ازور کے نام سے ہوئی جو لندن کا رہائشی اور پنجاب سے تعلق رکھتا ہے، شہری نے سرفراز کو اُس وقت روکنے کی کوشش کی جب اُن کی گود میں ییٹا رو رہا تھا۔

پاکستانی شہری نے نازیبا الفاظ استعمال کرتے ہوئے سرفراز کو موٹا بولا جس کے بعد سوشل میڈیا پر قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان کے حق میں صارفین نے ٹرینڈ شروع کیا اور نعمان کی ویڈیو کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔

سوشل میڈیا پر شدید احتجاج اور برطانوی پولیس کو رپورٹ کے بعد نعمان نے رات گئے اپنا معافی نامہ ویڈیو پیغام کی صورت ارسال کیا جس میں انہوں نے کہا کہ وہ ویڈیو بنا کر ڈیلیٹ کردی تھی مگر نہ جانے کس طرح سے خود بہ خود شیئر ہوگئی۔

سوشل میڈیا صارفین نے سرفراز کے حق میں آواز بلند کی اور اس واقعے کا ذمہ دار شعیب اختر کو قرار دیا کیونکہ انہوں نے کپتان کو موٹے پیٹ والا ان فٹ کپتان قرار دیا۔

یاد رہے کہ بھارت سے شکست کے بعد عالمی سطح پر پاکستانی ٹیم کی نمائندگی کرنے والے بھی سرفراز کے خلاف کھل کر سامنے آگئے ہیں جبکہ یہ بھی چہ مگوئیاں جاری ہیں کہ کپتان کے خلاف لابنگ میں شعیب ملک اہم کردار ادا کررہے ہیں ، اس سازشی گروہ میں عماد وسیم، شاداب خان، بابر اعظم، وہاب ریاض، امام الحق سمیت دیگر شامل ہیں۔

پاکستانی اداکاراؤں وینا ملک، مہوش حیات سمیت دیگر نے بھی اس کو شرمناک حرکت قرار دیا جبکہ معروف شخصیات بھی سرفراز کے حق میں بول پڑے۔

سرفراز احمد کے ساتھ پیش آنے والے ہراسانی واقعے کی ویڈیو سب سے پہلے سوشل میڈیا ایکٹوسٹ رضا مہدی نے شیئر کی بعد ازاں انہوں نے ہی معافی کی بھی ویڈیو شیئر کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: