عمران فاروق قتل کیس، میٹرپولیٹن پولیس نے اہم سی سی ٹی وی ویڈیو جاری کردی

عمران فاروق قتل کیس، میٹرپولیٹن پولیس نے اہم سی سی ٹی وی ویڈیو جاری کردی

لندن کی میٹروپولیٹن پولیس نے ڈاکٹر عمران فاروق کے قتل سے چند لمحے قبل کی ویڈیو جاری کردی جس میں کاشف حسین کو آلہ قتل خریدتے ہوئے بھی دکھایا گیا ہے۔

میٹروپولیٹن پولیس نے قتل کی تفتیش کے لیے چار ہزار سے زائد لوگوں کے انٹرویو ریکارڈ کیے، جبکہ سیکڑوں فوٹیج کو جمع کر کے واقعے کی تہہ تک پہنچے۔

برطانوی پولیس کے ذرائع کا کہنا ہے کہ جس اینٹ اور چھری کی مدد سے عمران فاروق کو قتل کیا گیا اُس کے فنگر پرنٹ کاشف حسین سے مل چکے ہیں، کراچی ایئرپورٹ سے 2010 میں حساس اداروں نے محسن اور کاشف کو حراست میں لیا تھا۔

سینئر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود اپنے ایک پروگرام میں یہ انکشاف کرچکے ہیں کہ کاشف دورانِ حراست انتقال کرچکا ہے جس کے بعد اداروں نے معظم، خالد شمیم اور محسن کی گرفتاری کو ظاہر کرنے کا فیصلہ کیا۔

عدالتی فیصلے پر بیوہ عمران فاروق کا تبصرہ

دوسری جانب برطانوی ہائی کمیشن نے ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس کے فیصلے کو دونوں ممالک کی مشترکہ کاوش قرار دیا اور کہا کہ ایک شخص کو عمران فاروق کے قتل کا مجرم قرار دے کر اُس پر فرد جرم عائد کی گئی، پاکستان برطانیہ کے اداروں کی مشترکہ کوششوں سے حاصل ہونے والے نتائج حوصلہ افزا ہیں، محسن علی سید کو قتل اور سازش کا مرتکب قرار دیا گیا، کاشف کامران کو شریک جرم کی حیثیت سے تسلیم کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں: