بھارت کی پاکستان کو سنگین دھمکی

لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے قریب 2 بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کے بعد ان کی لاشوں کو مسخ کیے جانے کے بھارتی دعوؤں کی اسلام آباد کی جانب سے سختی سے تردید کے باوجود بھارت کے وائس چیف آف آرمی اسٹاف لیفٹیننٹ جنرل سارتھ چند کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج ‘جو کرے گی’ اسے عوام کے سامنے بیان نہیں کیا جاسکتا۔

بھارتی ویب سائٹ ‘دی ہندو’ کی ایک رپورٹ کے مطابق ایک عوامی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے بھارتی وائس چیف آف آرمی اسٹاف نے پاکستان کو دھمکی دی کہ اس کا بدلہ ‘بھارت اپنی مرضی کے وقت اور مقام پر لے گا’۔

خیال رہے کہ رواں ہفتے کے آغاز میں بھارتی فوج نے الزام عائد کیا تھا کہ پاکستانی سیکیورٹی فورسز نے ایل او سی کے قریب ہندوستانی پوسٹوں پر راکٹ اور مارٹر فائر کیے اور غیر فوجی اقدام کرتے ہوئے گشت پر تعینات 2 ہندوستانی فوجیوں کی لاشیں مسخ کردیں۔

تاہم پاک فوج نے ان دعوؤں کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ نہ ہی پاک فوج نے ایل او سی پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کی اور نہ ہی بھارت کے الزام کے مطابق باٹ (بارڈر ایکشن ٹیم) نے ایل او سی کے بٹل سیکٹر پر حملہ کیا۔

پاکستان کی جانب سے دعوؤں کو تردید کو نظرانداز کرتے جنرل سارتھ چند کا کہنا تھا، ‘وہ کہتے ہیں ان کی فورسز نے ایسا نہیں کیا، تو پھر ایسا کس نے کیا ہے؟ انہوں نے یہ کیا ہے اور انہیں اس بات کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے نتائج کا سامنا کرنا ہوگا’۔

بشکریہ ڈان نیوز

اپنا تبصرہ بھیجیں: