افغانستان لہو لہو، کابل کی مسجد میں‌ خودکش دھماکا

افغانستان کے دارالحکومت کابل کی مسجد میں خود کش حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں  چار افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہوئے۔

سیکیورٹی حکام کے مطابق جاں‌ بحق افراد میں‌ معروف تاجر حاجی رمضان بھی شامل ہیں‌ حاجی رمضان ہی نے الزاہراہ مسجد تعمیر کرائی تھی، سیکیورٹی حکام کے مطابق دھماکا خیز مواد جسم سے باندھا ہوا دہشت گرد مسجد الزاہراہ کے باورچی خانہ میں چھپا ہوا تھا کچھ دیر پہلے ہی جب لوگ بڑی تعداد میں عبادت کے لیے جمع ہوئے تو اس نے اندر داخل ہونے کی کوشش کی لیکن دروازے پر کھڑے پولیس اہل کار نے اسے روکا اور اس نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا۔

دھماکا دروازے پر ہونے کی وجہ سے جانی نقصان کم ہوا،  اس سے پہلے بھی نومبر میں مسجد پر خودکش حملہ کیا گیا تھا جس میں 30 سے زائد افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوئے تھے

اپنا تبصرہ بھیجیں: