راحیل شریف کوایک ارب30کروڑسےزائد کی868زمین الاٹ

لاہور : معتبر ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف کو ایک ارب 30 کروڑ سے زائد کی 868 کینال زمین الاٹ کی گئی ہے، جس میں سے 90 ایکٹر میں سے 50ایکٹر بطور جنرل اور 40 ایکٹر بطور چیف آف آرمی اسٹاف الاٹ کی گئی ہے، اراضی کی تقسیم کی نگرانی جی ایچ کیو میں تعینات لیفٹننٹ جنرل عہدے کا ایڈجوٹنٹ جنرل کرتا ہے۔

معتبر ذرائع کی جانب سے اس بات کا دعویٰ کیا گیا ہے کہ سابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف کو بارڈر ایریا کمیٹی کے ذریعے بیدیاں روڈ لاہور پر واقع جو اراضی الاٹ کی گئی ہے، اس کا رقبہ 482 کنال نہیں بلکہ 868 کنال، 10 مربے ہے، جو 90 ایکٹر سے زائد بنتی ہے۔

اس قیمتی زمین کی مالیت ایک ارب 35 کروڑ روپے کے لگ بھگ بتائی گئی ہے، ذرائع نے واضح کیا ہے کہ راحیل شریف کو بطور جنرل اور 40 ایکٹر بطور چیف آف آرمی اسٹاف الاٹ کی گئی ہے۔

مذکورہ زمین 24 دسمبر سال 2014 کو الاٹ کی گئی تھی، زمین سے متعلق جی ایچ کیو کے احکامات کو متعلقہ چیئرمین بارڈر ایریا کمیٹی کو پہنچایا جاتا ہے اور اس پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جاتا ہے۔ کسی بھی فوجی افسر کو الاٹ کرنے والی زمین کی منظوری جی ایچ کیو سے آتی ہے۔ بشکریہ سماء

اپنا تبصرہ بھیجیں:

اپنا تبصرہ بھیجیں