فوٹ پاتھ اسکول کی خاتون ٹیچر پر پولیس اہلکار کا تشدد، ویڈیو دیکھیں

کراچی : کلفٹن میں فوٹ پاتھ اسکول پر حملہ کرکے سرکاری اسلحے کے زور پر خواتین ٹیچرز پر تشدد میں ملوث ایک پولیس اہلکار  گرفتار ، 2 تاحال آزاد، بااثر پولیس افسران کی مداخلت کی وجھ سے بوٹ بیسن پولیس نے ابھی تک دہشتگردی کی ایف آئی آر درج نہیں کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق کلفٹن کے علاقے عبداللہ شاہ غازی مزار کے قریب فٹ پاتھ اسکول کی خاتون ٹیچر پر سادہ لباس اہلکار نے تشدد کیا اور سرکاری اسلحہ تان پر قتل کی دھمکیاں دیں۔ اسکول ٹیچر کے مطابق تشدد کرنے والا اہلکار ایس پی زاہد شاہ کے اسکواڈ میں شامل تھا اور اُس نے اپنا تعارف کرواتے ہوئے بچوں کو تعلیم دینے سے روکنے کے احکامات دیے تاہم منع کرنے پر تشدد کا نشانہ بنایا۔

ٹیچرز نے واقعے کی اطلاع بوٹ بیسن تھانے کو دی تو اعلیٰ حکام نے مقدمہ درج کرنے کے بجائے معاملہ رفع دفع کرنے کے لیے ایس ایس پی سطح کے سنیئر افسران سے ٹیچرز سے رابطہ کر کے درخواست واپس لینے پر دباؤ ڈالا۔

سول سوسائٹی کو جب اس بات کا علم ہوا تو انہوں نے پولیس گردی کے خلاف احتجاج کا اعلان کرتے ہوئے واقعے میں ملوث اہلکاروں کی گرفتاری کا مطالبہ کردیا ہے۔ دوسری جانب پاک سرزمین پارٹی نے ٹیچرز اور سول سوسائٹی کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی ہے۔

تشدد کی فوٹیچ ذرائع نیوز نے حاصل کرلی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں:

فوٹ پاتھ اسکول کی خاتون ٹیچر پر پولیس اہلکار کا تشدد، ویڈیو دیکھیں” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں